Browsing category

Rose Marie

Ishq Zard Rang Maiel Novel by Rose Marie – Last Episode 14

عشق ذرد رنگ مائل از روز میری -آخری قسط نمبر 14 –**–**– رات کے دو بج رہے تھے حسب عادت احتشام کی آنکھوں سے نیند کوسوں دور تھی ۔۔۔ آج مضطرب دل کی حالت قدرے سنبھلی تھی جسکی وجہ اسکے سامنے نیند کا مزہ لوٹتی وہ بچی تھی جسکا معصوم چہرہ نیند کی آغوش میں […]

Ishq Zard Rang Maiel Novel by Rose Marie – Episode 13

عشق ذرد رنگ مائل از روز میری – قسط نمبر 13 –**–**–   سال بھر سے روم میں قید رہ کر اب وہ انقباض خاطر اور ضد رغبت کی مورت بن چکی تھی ۔۔۔ جس پل اور حسب دلخواہ کی وہ برسوں سے منتظر تھی آج قسمت نے اسے دے دیا تھا۔ اپنے روم کا […]

Ishq Zard Rang Maiel Novel by Rose Marie – Episode 12

عشق ذرد رنگ مائل از روز میری – قسط نمبر 12 –**–**–   “میرے پاس تو اتنے پیسے بھی نہیں کہ کہیں رہنے کا بندوبست ہی کر لوں جتنے ہیں ان سے تو دو وقت کی روٹی مشکل ہے ۔۔۔ انجان لوگوں سے بھری اس دنیا میں،، میں کس سے مدد طلب کروں ۔۔۔۔ یہ […]

Ishq Zard Rang Maiel Novel by Rose Marie – Episode 11

عشق ذرد رنگ مائل از روز میری – قسط نمبر 11 –**–**–   “نین تارا یہ تو تم نے بہت اچھا کیا جو یہاں چلی آئی جب سے مجھے تمھاری تائی نے بتایا ہے کہ انہوں نے تمھیں گھر سے نکال دیا میرا دل تمھارے لیئے بہت پریشان تھا۔۔۔ نجانے کیسے لوگ ہیں ذرا لحاظ […]

Ishq Zard Rang Maiel Novel by Rose Marie – Episode 10

عشق ذرد رنگ مائل از روز میری – قسط نمبر 10 –**–**–   “ہیلو اسلام و علیکم”۔ “نین تارا سوری میں نے تمھیں ڈسٹرب کیا۔۔۔ وہ مجھے یہ پوچھنا تھا کہ تم اس وقت کہاں ہو؟”۔ دوسری جانب سے روہینہ کی آواز نین تارا کے کان کے گوشے سے آ ٹکڑائی۔ “روہینہ میں ابھی گھر […]

Ishq Zard Rang Maiel Novel by Rose Marie – Episode 9

عشق ذرد رنگ مائل از روز میری – قسط نمبر 9 –**–**–   اوٹی کے باہر اپنے جسم کو دیوار سے لگائے اسنے دونوں بازو سینے پہ لپیٹ رکھے تھے۔۔۔ رات کی وجہ سے کوریڈور سنسان تھا۔۔۔ خاموشی کے باعث اسکے دل کی بالمضاعف چلتی دھڑکنیں واشگاف سنائی دے رہیں تھیں۔۔۔ گردن کو جنبش دیتے […]

Ishq Zard Rang Maiel Novel by Rose Marie – Episode 8

عشق ذرد رنگ مائل از روز میری – قسط نمبر 8 –**–**–   “کیا ہوا ماما؟۔۔۔ آپ اور پاپا کہاں سے آ رہے ہیں؟؟”۔ ممتاز اور واجد یکجا انٹرنس کی دہلیز پار کرتے صحن میں آمنے سامنے آ بیٹھے تھے جب روہینہ اس طرف آ کر پر مزہ انداز میں پوچھنے لگی۔ “تمھاری خالہ کی […]

Ishq Zard Rang Maiel Novel by Rose Marie – Episode 7

عشق ذرد رنگ مائل از روز میری – قسط نمبر 7 –**–**–   آسمان پہ ہلکی ہلکی بدلی چھائی تھی جس سے سورج نصف چھپ گیا تھا۔ سندس اپنے روم میں نین تارا اور احتشام کی زندگی میں رونما ہونے والی نئی تبدیلی کو لے کر بے حد پریشان تھی۔ “سندس امی ناشتے کیلیئے بلا […]

Ishq Zard Rang Maiel Novel by Rose Marie – Episode 6

عشق ذرد رنگ مائل از روز میری – قسط نمبر 6 –**–**–   احتشام سندس کے مد مقابل ممتاز کے برابر والی چیئر پہ بیٹھا تھا۔۔۔ نین تارا احتشام کیلیئے چائے بنا لائی تھی جو وسط میں رکھے میز پہ پڑی تھی۔۔۔۔ پیالی سے اٹھتا دھواں اس بات کا چشمدید گواہ تھا کہ اس میں […]

Ishq Zard Rang Maiel Novel by Rose Marie – Episode 5

عشق ذرد رنگ مائل از روز میری – قسط نمبر 5 –**–**–   سندس پاگل ہو گئی ہو؟؟؟ چھوڑو اسے۔۔۔ کیا کر رہی ہو؟؟”۔ نین تارا کی آواز پہ روہینہ اس طرف دوڑتی آئی تھی۔ “اسکی ہمت کیسے ہوئی؟؟ ۔۔۔ میں اسے چھوڑوں گی نہیں”۔ روہینہ نے سندس کے ہاتھ سے استری پکڑتے ٹیبل پہ […]

Ishq Zard Rang Maiel Novel by Rose Marie – Episode 4

عشق ذرد رنگ مائل از روز میری – قسط نمبر 4 –**–**–   بالآخر وہ شام آ گئی تھی جب نین تارا کا نام تا زیست احتشام کے نام کے ساتھ جوڑ دیا جانا تھا۔ نکاح کے تین بول نین تارا کے وجود کی چلتی سانسوں کو بھی احتشام کی ملکیت میں آنے کا ثبوت […]

Ishq Zard Rang Maiel Novel by Rose Marie – Episode 3

عشق ذرد رنگ مائل از روز میری – قسط نمبر 3 –**–**–   “بی جان آپ نے مجھے بلوایا؟؟”۔ گھر کے کام سے ہاتھ صاف کرتے وہ قدسیہ کے روم میں آ پہنچی۔ “ہاں نین تارا ۔۔۔ بیٹھو”۔ نین تارا کو بیٹھنے کا اشارہ کرتے وہ وارڈ روب کی جانب بڑھیں تھیں۔ گفٹ پیک نکالتے […]

Ishq Zard Rang Maiel Novel by Rose Marie – Episode 2

عشق ذرد رنگ مائل از روز میری – قسط نمبر 2 –**–**–   “بی جان آپکو کسی چیز کی ضرورت ہے؟؟؟”۔ قدسیہ کے روم میں داخل ہوتے اسنے احتیاط پوچھ لیا۔ “نہیں میری بچی کسی چیز کی ضرورت میسر نہیں ۔۔۔۔ ادھر آو میرے پاس بیٹھو”۔ نفی کرتے اسنے نین تارا کو اپنے سامنے بیڈ […]

Ishq Zard Rang Maiel Novel by Rose Marie – Episode 1

عشق ذرد رنگ مائل از روز میری – قسط نمبر 1 –**–**– “آنکھوں میں نور بن کر سمایا وہ اس قدر کسی اور کو تکنے کا جواز ہی مٹ گیا ہے” شام کے پانچ بج رہے تھے اور وہ چھت پہ دھلے کپڑے پھیلانے کی غرض سے آئی تھی۔ “نین تارا۔۔۔۔ نین تارا۔۔۔۔ نجانے کدھر […]