Chiragh Sham Se Pehlay By Huma Waqas – Episode 31

0
چِراغ شام سے پہلے از ہماوقاص – قسط نمبر 31

–**–**–

” ہا۔ ہ۔ہ۔ہ۔ہ۔ں۔ں۔ں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔”
منہا کے حلق سے ایک خوفناک چیخ برآمد ہوٸ ، دونوں ہتھیلیوں کو ایک ساتھ ملاۓ وہ اپنے منہ پر رکھے پھٹی آنکھوں سے سامنے دیوار کو تاک رہی تھی جہاں ایک سکینڈ پہلے رمنا کھڑی تھی وہ اب وہاں موجود نہیں تھی ۔
دھڑکتے دل ، کانپتے وجود کے ساتھ وہ برق رفتاری سے باٸیں طرف کے زینے کی طرف بھاگی ، پورے جسم کے رونگٹے کھڑے تھے اور ہاتھ ٹھنڈے ہو رہے تھے ، دماغ ساٸیں ساٸیں کرنے لگا تھا ۔
یہ زینہ زیادہ طرف چھت پر جانے کے لیے استعمال نہیں ہوتا تھا یہاں کاٹھ کباڑ ، سمینٹ کی بوریاں اور اینٹیں رکھی ہوٸ تھیں ، وہ زینے نیچے اتر رہی تھی جبکہ صحن میں موجود تمام نفوس اس وقت ایک جھمگٹے کی صورت رمنا پر جھکے تھے وہ اتنی تیزی سے زینہ اتر کر نیچے آٸ تھی کہ کسی کی نگاہ باٸیں طرف کے بیلوں میں ڈھکے جنگلے والے زینے کی طرف گٸ ہی نہیں جبکہ کے وحشت سے آنکھیں پھاڑے کھڑے بہادر نے اسی پل گڑبڑا کر برساتی کی طرف دوڑ لگا دی ۔
وہ برساتی می

–**–**–
جاری ہے
——
آپکو یہ ناول کیسا لگا؟
کمنٹس میں اپنی رائے سے ضرور آگاہ کریں۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Subscribe For Latest Novels

Signup for Novels and get notified when we publish new Novel for free!




%d bloggers like this: