Jinnat ki Shaadi Short Horror Story By Waseem Anwar

0
جنات کی شادی مکمل شارٹ سٹوری از وسیم انور

–**–**–

پچھلے ہمارے پاس ایک کزن تشریف لائے تھے تو انہوں نے یہ واقعی سنایا تھا یہ ایک سچا واقعی ہے جس کے کریکٹر اور وہ جگہ اب بھی موجود ہیں تو آئیے اصل واقعی کی طرف بڑھتے ہیں
میرا نام مشتاق ہے اور میں اس گودام نما فارم ہاوس میں پچھلے 6 ماہ سے ڈیوٹی سر انجام دے رہا ہوں میرے ساتھ میرا ایک ساتھی عمران بھی ہوتا ہے رات کے وقت ہماری ڈیوٹی صرف 2 لوگوں کی ہوتی ہے کیونکہ رات کو مال کی لوڈنگ اور ان لوڈنگ بند ہوتی ہے اس لئیے گاڑیوں کا آنا جانا بھی بند ہوتا ہے ہمارا یہ فارم ہاوس مریدکے سے آگے جلو کی طرف واقع ہے جس کے دونوں اطراف بانس کے گھنے جنگلات ہیں اور وہاں پر عام آبادی نہیں ہے آس پاس بس بانس کے جنگلات اور کھیت کھلیان ہیں وہ سردیوں کی راتیں تھی میری ڈیوٹی فارم ہاوس کی پچھلی سائڈ پر تھی اس رات سردی کی شدت کچھ زیادہ ہی تھی پر میں آگ جلا کے بیٹھا رہا پر رات 12 کے بعد مجھے اونگ آئی اور پھر میری آنکھ لگ گئی تقریبا کوئی ایک گھنٹے کے بعد میری آنکھ کھلی تو میں نے دیکھا کہ کچھ لوگ ہیں جن میں 3 سے 4 خواتین شامل ہیں انہوں نے سفید رنگ کے لباس پہنے ہیں اور فارم ہاوس کی دیوار کے ساتھ لگ کر کھڑے ہیں انکے منہ دوسری طرف تھے پر پشت میری طرف تھی میں ٹارچ جلا کر ان پر اسکی روشنی ڈالی پر وہ لوگ اپنی جگہ سے ہلے نہیں میں تھوڑا ڈر گیا لیکن پاس جاکر ان سے پوچھا کہ کون ہو تم لوگ اور ادھر کیا کر رہے ہو ان میں سے ایک عورت بولی کہ نظر نہیں آ رہا شادی ہو رہی ہے اور تم جو ہے اوپر سے لائیٹں مار رہے ہو میں نے کہا کہ اس ورانے میں آدھی رات کو کس کی شادی ہو رہی ہے تم لوگ مجھے پاگل نا بناو سچ بتاو کون ہو تم لوگ وہ عورت بولی زرا اس طرف لائٹ مارو تمہیں نظر آ جائے گی کہ کس کی شادی ہو رہی ہے میں گھوم کر دوسری طرف بانسوں کے جنگل میں لائٹ ماری تو وہاں پر کوئی چیز نظر نہ آئی میں نہ کہا دیکھا کچھ بھی نہیں ادھر لیکن دوسری طرف سے کوئی جواب نا ملا جب میں نے نظر اٹھا کر دوسری طرف دیکھا تو ادھر بھی کوئی نا تھا سب کچھ غائب تھا بھرپور سردی میں بھی جسم سے پسینے چھوٹ گئے کلمہ طیبہ کا ورد پڑھ کر پیچھے کو ڈوڑ لگا دی اور آکر اپنی پوسٹ میں بیٹھ گیا ڈر کے مارے میں کانپ رہا تھا اتنی ہمت نہیں ہو رہی تھی جا کے اپنے ساتھی کو یہ واقع بتا دوں خیر ہمارا معمول تھا کہ ہم لوگ رات کو ایک سے 2 گھنٹے کے لئیے سوتے تھے اس دوران دوسرے کو اطلاع کر دیتے تھے کہ میں سونے لگا ہوں تم خیال رکھنا زرا چکر دوسری طرف کا لگا لینا اس دوران عمران آ گیا اور بولا کہ میں دوسری طرف زرا آرام کرنے لگا ہوں تم ادھر چکر لگا لینا اس نے میری حالت پر غور نہیں کیا اور کہ کر چلا گیا تقریبا 1 سے 2 گھنٹے میں میری حالت قدرے بہتر ہوئی تھی سردیوں کی راتیں تھی کہا اتنی جلدی ختم ہوتی ہیں میں نے اٹھ کر مین گیٹ کی طرف چکر لگایا اور وہاں پر سب اوکے پاکر واپس اپنی جگہ پر آگیا تھوڑی دیر بعد میں نے محسوس کیا کہ جیسے دیوار کے پاس کوئی ہے اور مجھے بلا رہا ہے پہلے تو میں نے نا جانے کا سوچا پھر میں نے کہا کہ شائد کوئی مسافر ہو جسکو میری مدد کی ضرورت ہوگی میں اٹھا اور وہاں گیا تو دیکھا ایک بہت ہی خوبصورت دوشیزہ دیوار کے ساتھ کھڑی تھی کہتی زرا مجھے آگے چھوڑ آئیں مجھے ڈر لگ رہا ہے دل میں سوال تو بہت آئے کہ پوچھوں کہ آپ اس ویرانے میں آدھی رات کیا کر رہی ہیں پر ہمت نا ہوئی اور نا انکار کر سکا کہ اسکو مدد کی ضرورت ہے میں اسکے ساتھ چل پڑا وہ بولی کہ بس وہ بانسوں تک چھوڑ دے آگے میں چلی جاوں گی پاس ہی میرا گھر ہے میں اسکو وہاں چھوڑ کے آنے لگا تو میں بہت حیران تھا کہ ان بانسوں کے جنگلات کے آگے یہ بستی کہاں سے آگئی جبکہ آج تک مجھے تو کبھی محسوس نہیں ہوا اور نہ ہی کوئی آتا جاتا دکھائی دیا پورا محلہ سجا ہوا تھا اور لائٹنگ کی گئی تھی کہنے لگی آو میں تم کو شادی دکھاو شادی کی تقریب دیکھتے جاو میں اسکے ساتھ ہو لیا وہ کوئی پرانے طرز کا بنا ہوا گھر تھا جہاں پر مہمان بٹھائے گئے تھے ان میں بچے بڑے اوع خواتین شامل تھی اس نے کہا کہ آج یہی رک جائیں شادی دیکھ کر جانا وہ بہت خوبصورت تھی میں انکار نہیں کر سکتا تھا پر میں نے ڈیوٹی کا بہانہ بنا کر انکار کر دیا وہ کہتی رکو میں مٹھائی دیتی ہوں اسکے ہاتھ میں ایک شاپر تھا جس میں مٹھائی تھی کہتی گھر جاکے سب کو بھی کھلانا وہ اتنی خوبصور ت تھی…

کہ میں سب کچھ بھول جاتا تھا ایک مکمل نسوانی حسن کا مجسمہ تھا میں نے شکریہ ادا کیا اور واپسی کی راہ پر چل پڑا میں پیچھے مڑ کر دیکھا تو وہاں اب کچھ بھی نہیں تھا نا وہ گھر نظر آ رہا تھا جہاں وہ گئی تھی اور نا کچھ اور میں جلدی سے بھاگ کر وہ بانسوں والا علاقہ پار کیا اور کسی نا کسی طرح اپنی پوسٹ پر پہنچا اور وہی گر کر بے ہوش ہو گیا صبح 6 بجے جب ہماری ڈیوٹی آف ہوتی یے تو عمران مجھے جگانے آیا پر مجھے بے ہوش دیکھ کر وہ گھبرا گیا کیونکہ اسکے اٹھانے اور ہلانے پر میں اٹھ نا رہا تھا پھر اس نے پانی اوپر پھینکا اور مجھے تھوڑا ہوش آیا میرے ہوش میں آتے ہی اس نے مجھ سے پوچھا کیا ہوا تم ٹھیک تو ہو بے ہوش کیوں پڑے تھے میں نے اسکو سارا واقع کہہ سنایا جسے سن کر وہ بھی ڈر گیا مجھے اب تیز بخار تھا ڈر کی وجہ سے میں رات سے بخار میں مبتلا تھا لیکن مججے محسوس نا ہوا اب عمران کے بتانے پر میں نے محسوس کیا تو جسم واقعی آگ بنا تھا خیر ہم نے جلدی جلدی جانے کی تیاری کی اور گیٹ کر طرف پر چل دئیے گیسٹ سے باہر نکل کر جب ہم موٹرسائیکل پر بیٹھنے لگے تو عمران کہتا ہے مشتاق تم نے ہاتھ میں یہ کونسا شاپر پکڑا ہے مجھے یاد آیا یہ تو وہی شاپر ہے جس میں رات اس نے مٹھائی ڈال کے دی تھی جو بے احتیاطی میں ساتھ ہی لے آیا تھا عمران کو بتایا کہ اس میں مٹھائی ہے جب ہم نے اسے کھول کر دیکھا تو اس میں جانوروں کے فضلہ اور گند بھرا ہوا تھا جو ہم نے پھینک دیا اور جلدی سے گھر پہنچ گئے مجھے گھر آکر مزید تیز بخار ہو گیاتھا جو اترنے کا نام نہیں لے رہا تھا پہلے تو میں نے گھر والوں کو کچھ نہ بتایا پھر اگلے دن جب بخار کم نا ہوا تو میں نے سارا واقع کہہ سنایا تب بڑے بھائی ایک مولوی صاحب کو لے آئے انہوں نے دم کیا اور دم والا پانی پینے کو دیا اور پورا واقع سننے کے بعد بولے وہ جنات کی بستی تھی اور ادھر انکی شادی تھی اس رات اگر تم ادھر رک جاتے تو شائد وہ تمہیں ساتھ لے جاتے ہمیشہ کے لئیے اور وہ جو مٹھائی تھی وہ انکا کھانا تھا جنات یہی سب کچھ کھاتے ہیں وہ بانسوں والا علاقہ پہلے ہندوں کے پرانے گھروں پر مشتمل تھا جسے بعد میں ختم کرکے بانس لگا دئیے گئے تھے تب میں چھوٹا تھا پر مجھے یہ سب یاد ہے بابا جی اسی گاوں کے تھے اس لئیے ان کو پتہ تھا کہ کسی زمانے میں یہاں ہندوں کے پرانے گھر تھے بحرحال اسکے اگلے دن میں ٹھیک ہوگیا تھا بخار اتر گیا تھا اور اسکے بعد میں نے فارم ہاوس میں جانے سے توبہ کرلئ
ختم شد
کیسی لگی آپ سب کو یہ سٹوری امید ہے پسند آئی ہوگی مزید سٹوریز کے لئیے اچھا سا فیڈ بیک دیں اور لایک کمنٹ شئیر کریں بہت بہت شکریہ
نوٹ آپ بھی کوئی آپ بیتی یا سچا واقع لکھ سکتے ہیں
شکریہ

–**–**–
ختم شد
——
آپکو یہ ناول کیسا لگا؟
کمنٹس میں اپنی رائے سے ضرور آگاہ کریں۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Subscribe For Latest Novels

Signup for Novels and get notified when we publish new Novel for free!




%d bloggers like this: