Kisi Aur Ka Hun Filhal Novel By Suhaira Awais – Episode 11

0
کسی اور کا ہوں فی الحال از سہیرا اویس – قسط نمبر 11

–**–**–

تقی کو اس کی موجودگی پر بری طرح شاک لگا تھا۔
وہ اپنی حیرت اور تجسّس برقرار رکھے ڈرائنگ روم میں داخل ہوا۔۔
سب کو سلام کیا اور وہیں بیٹھ گیا۔۔
وہ اس کے امی ابو۔۔ چچا اور انیلہ چچی بھی موجود تھیں۔۔
ایک۔۔ نہایت ہی اچھے ماحول میں گفتگو کا سلسلہ جاری تھا۔۔
پر تقی کو یہ ماحول بالکل اچھا نہیں لگا۔۔ اسے کسی انہونی کا احساس ہو رہا تھا۔۔
اس نے شدت سے دعا کی کہ وہ جو سوچ رہا ہے۔۔اللّٰه کرے غلط ہو۔۔
پر اس کی سوچ اس کا اندازہ غلط نہیں تھا۔۔
وہ ماں بیٹے نداحل کے رشتے کے لیے آئے تھے۔۔
اور نداحل کی امی تو ان لوگوں سے خاصہ مرعوب بھی ہو چکی تھیں۔۔
اس میں ہمت نہیں تھی اب مزید یہاں بیٹھنے کی۔۔
اس لیے وہ سب سے ایکسکیوز کرتا اور ایک کڑوی سی نظر اس عمیر پر ڈالتا باہر نکل آیا۔۔
وہ باہر نکلا۔۔ تو نداحل آمنہ کے ساتھ۔۔ لوازمات سے بھری ٹرالی۔۔۔ بڑی خاموشی سے گھسیٹتی ہوئی لا رہی تھی۔۔
تقی نے اس کے چہرے پر ایک کھوئی ہوئی سی نظر ڈالی۔۔ جو آمنہ بھی نوٹ کر چکی تھی۔۔اور وہ وہاں سے چلا گیا۔۔
آمنہ۔۔ نداحل کو ڈرائنگ روم تک لائی۔۔۔۔
وہ خود وہاں سے زیادہ دیر نہیں بیٹھی۔۔
کیوں کہ اسے تقی سے بات کرنی تھی۔۔
اس کے بدلے رویے کا سبب معلوم کرنا تھا۔۔
اور پتہ نہیں کیوں۔۔ مگر وہ یہ کام فوراً کرنا چاہتی تھی۔۔
انیلا بیگم کے دائیں طرف بیٹھی نداحل۔۔ مسلسل عمیر کی توجہ اپنی جانب مبذول کیے ہوئے تھی۔۔
وہ سب لوگوں کے سامنے یہ تاڑنے والی حرکتیں نہیں کرنا چاہتا تھا۔۔ پر برا ہو۔۔ نداحل کی مقناطیسی خوبصورتی کا۔۔
جو ملک عمیر کو چین ہی نہیں لینے دے رہی تھی۔۔
سب گھر والے عمیر کی پرسنیلٹی سے بہت متاثر ہوئے۔۔
نداحل کے تایا اور دادا کو۔۔ عمیر کے سیاست میں ملوث ہونے سے مسئلہ تھا۔۔
لیکن وہ مسئلہ بھی عمیر سے چند منٹ کی گفتگو میں ختم ہوگیا۔۔
اس کا بات کرنے کا انداز۔۔ لفظوں کا چناؤ ، ان کی ادائیگی، سب بہت دلکش اور گرویدہ بنا لینے والا تھا۔۔
نداحل۔۔ان سب کے درمیان بیٹھی۔۔ خاصی الجھن محسوس کررہی تھی۔۔
کیونکہ اسے عمیر سے ایسی پیش قدمی کی امید نہیں تھی۔۔
پر اس نے سوچا کہ وہ ان کے جاتے ہی اپنی ماما کو بول دے گی کہ اسے عمیر سے شادی نہیں کرنی۔۔
لیکن اسے کیا پتہ تھا کہ اس کا ارادہ کتنا کمزور ہے۔۔
وہ بالکل ایسا نہیں کر پائے گی۔۔
کیونکہ انجانے میں۔۔ وہ عمیر کی سحر انگیز شخصیت کی طرف مائل ہوچکی تھی۔۔
عمیر کی پرسنیلٹی کا جادو۔۔ اس کے دل سے تقی کی محبت کے نقوش کو ہلکا کرنے لگا تھا۔۔
وہ تقی کی محبت بھولنے لگی تھی۔۔
پر اسے کیا پتہ تھا۔۔!!
تقی اور نداحل کی قسمت کتنے عجیب دوراہے پر لے آئی تھی ان کو۔۔
یہاں تقی ناچاہتے ہوئے بھی۔۔
خود کو نداحل کے عشق میں جھونکتا جارہا تھا اور وہاں نداحل۔۔!! اس کی محبت بھولنے لگی تھی۔۔
یا شاید اسے تقی سے محبت تھی ہی نہیں۔۔
وہ تو وقتی اٹریکشن تھی۔۔ جو صرف اور صرف تقی کی سویٹ پرسنیلٹی کا نتیجہ تھا۔۔۔
باقی اس اٹریکشن کو محبت کا نام دینے کی غلطی۔۔ اس نے اپنی دوستوں کی صحبت کا اثر قبول کرتے ہوئے کی تھی۔۔
ان کی روز روز کی پیار محبت پر مبنی گفتگو نے نداحل کو تقی کے متعلق ایسا سوچنے پر مجبور کیا تھا کہ وہ اس سے محبت کرتی ہے۔۔
مگر وہ اس سے محبت تو نہیں کرتی تھی۔۔
اس نے تو خود ہمیشہ سے ہی یہ سوچا تھا کہ وہ صرف اس شخص کو اپنے یہ جذبے سونپے گی کہ جس سے اس کا نکاح ہوگا۔۔
یہی وجہ تھی کہ وہ تقی سے اظہار محبت کرنے کے بعد بہت گلٹی فیل کرنے لگی تھی۔۔
پر فی الحال تو وہ اسی دھوکے میں تھی کہ اسے تقی سے محبت ہے۔۔ جبکہ اسے ہرگز تقی سے محبت نہیں تھی۔۔
تقی ڈرائنگ روم سے نکلنے کے بعد سیدھا اپنے روم میں گیا تھا۔۔
آمنہ بھی اس لیے وہیں آچکی تھی۔۔
ایک تو وہ پہلے ہی تقی کی لاپرواہی کی وجہ سے اس سے تھوڑی سی خفا تھی۔۔
اوپر سے تقی نے مزید اس پر کوئی توجہ نہیں دی۔۔
اور آج اس کا نداحل کو وارفتگی سے دیکھنا۔۔ یہ سب آمنہ کو بری طرح کھل رہا تھا۔۔
امامہ گھر پر نہیں تھی۔۔ وہ اپنے شاہ میر اور منیب انکل۔۔ یعنی تقی کے بھائیوں کے ساتھ مارکیٹ گئی تھی۔۔
سو آمنہ کے پاس کھل کر بات کرنے کا موقع تھا۔۔
آمنہ تقی کے سامنے ہی بیڈ پر بیٹھے۔۔ اسے کڑی نظروں سے گھور رہی تھی۔

–**–**–
جاری ہے
——
آپکو یہ ناول کیسا لگا؟
کمنٹس میں اپنی رائے سے ضرور آگاہ کریں۔

Read More:  Kehkashan Si Rehguzar Novel By Rubab Naqvi – Episode 4

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: