Nami Raqsam Novel By Ifrah Khan – Episode 8

0
نمی رقصم از افراح خان – قسط نمبر 8

–**–**–

ناجانے کتنا وقت ایسے ہی بیٹھے بیٹھے بیت گیا۔۔۔
اس نے کل سے کچھ کھایا بھی نہیں تھا۔۔۔۔
بھوک اور نڈھالی سے اس سے اٹھنا محال تھا۔۔۔
جب ایک بار پھر دروازہ کھلا انے والی نگینہ بائ تھی۔۔
جسے دیکھ کر وہ سوچنے لگی کل تک وہ ان سے نفرت کرتی تھی اور آج خود ان جیسی بننے جا رہی تھی۔۔۔۔
حضور یہ کیا حالت بنا لے آپ نے اپنی؟؟؟۔۔کمرے کا بھی کیا حال کر دیا ہے؟؟؟؟
آئیں ہمارے ساتھ ہم آپ کے لیے کھانا لےکر آئے ہیں۔۔۔۔کھا کر کچھ دیر آرام کر لیجیئے۔۔۔۔
وہ اسے پیار سے پچکارتی ہاتھ پکڑ کر اٹھائے لگی۔۔۔۔
حسینہ بیگم کو بلا کر لاؤ مجھے بات کرنی ہے وہ اس کے ہاتھ جھٹک کر خود کھڑی ہوئی اور آ کر بیڈ پر بیٹھ گئی۔۔۔
جا رہے ہیں ہم۔۔۔لیکن ہم آپ کو بہت ضروری بات بتانے آئے تھے۔۔۔بلکہ یوں کہ لیں بہت ضروری کچھ دکھانے آئے ہیں۔۔۔۔
غنچہ گل نے سوالیہ نظروں سے نگینہ کی طرف دیکھا۔۔؟؟؟
اس نے بہت رازداں سے ادھر اودھر دیکھتے ہوئے اپنے گریبان سے موبائل نکالا اور اس کہ کھولا۔۔۔
جلدی سے دو چار بٹنز دبائے اور موبائل اس کی طرف بڑھایا۔۔۔۔
حسینہ بیگم کو انکار کرنے سے پہلے یہ ایک بار دیکھ لیں۔۔۔۔
وہ کیسی ظالم عورت ہیں اب تک آپ کو اندازہ ہو چکا ہو گا۔۔۔
وہ اس کی باتوں سے دیہان ہٹاتی موبائل کی سکرین کو دیکھنے لگی۔۔۔ جہاں کوئی ویڈیو چل رہی تھی۔۔۔
جیسے جیسے وہ ویڈیو کو دیکھتی جا رہی تھی خوف سے اس کے رونگٹے کھڑے ہو رہے تھے۔۔۔۔
جہاں سکرین پر وہی صبح والا منظر تھا۔۔۔
وہی آدمی ایک اور لڑکی کے ساتھ ذیادتی کر رہا تھ۔۔۔۔ایک لمحے کے لیے وہ خوف سے کانپ گئی ۔۔۔
یہ کیا ہے۔۔۔۔؟؟؟؟
وہ غصے میں پوچھنے لگی۔۔۔
جو بھی لڑکی یہاں سے بھاگنے یا انکار کی کوشش کرتی ہے حسینہ بیگم اس کا یہی حال کروا دیتی ہیں۔۔۔۔
وہ ایسے بتا رہی تھی جیسے کوئی معمولی بات ہو۔۔۔۔
اپنی ماں کا بھیانک روپ جان کر غنچہ گل کو صیح معنوں میں ان سے نفرت محسوس ہوئی۔۔۔۔
اس نہیں غصے سے موبائل دیوار پہ مارا۔۔۔۔
نگینہ حیرانگی سے اسے دیکھ رہی تھی۔۔۔۔
چلی جاؤ میرے کمرے سے اور حسینہ بیگم کو بھیجو ایسی عورت کو وہ ماں کہنا بھی گواراہ نہیں کرتی جو اس جگہ معصوم انسانوں کو قید کرنے کے لیے مجبور کرتی تھی۔۔۔
نگینہ جا چکی تھی۔۔۔
وہ کچھ سوچتے ہوئے کمرے میں ٹہلنے لگی۔۔۔
میں ملکہ طوائف ضرور بنوں گی۔۔۔۔
اس عورت کی بادشاہت ختم کرنے کا یہی طریقہ ہے۔۔۔۔
اب میں یہاں مذید ظلم نہیں ہونے دونگی۔۔۔
وہ دل میں سوچتے ہوئے خود کو آگ میں جھونکنے کا فیصلہ کر چکی تھی۔۔۔۔
نگینہ بائ کمرے سے نکل کر سیدھا حسینہ بیگم کے پاس گئی۔۔۔۔
حضور ہمیں لگتا ہے آپ کو ضرور اچھی خبر ملے گی آپ جو چاہتی تھیں وہ ہو چکا ہے۔۔۔۔
نگینہ بائ آپ ہمارا دل خوش کر رہی ہیں ہم جانتے ہیں۔۔۔
ورنہ جس ماں کی وہ اولاد ہیں جب وہ اتنی سرکش اور ضدی ہیں بیٹی تو دو گنا ذیادہ ہوگی۔۔۔۔
جو ویڈیو آپ اسے دکھا کر آئی ہیں وہ اس کی ماں کی تھی
اتنا سب کچھ کر کے بھی نہیں مانی تھی۔۔۔
بیٹی اتنی آسانی سے کیسے مان گئ
۔۔۔۔
کیا مطلب حضور غنچہ بیگم آپ کی اپنی اولاد نہیں ؟
؟؟؟ وہ جس کی بھی اولاد ہیں ہماری نہیں ہیں
نگینہ بائ کے سوال پر حسینہ نے ناگواری سے اس کی طرف
دیکھا۔۔۔۔۔۔۔آج ہم نے یہ بات آپ کو بتا دی ہے
آئندہ آپ کی ذبان سے یہ بات نہ نکلے نہ ہی کسی دوسرے
تک یہ راز ل پہنچے لیکن اگر انکار کر دیا تو۔ ؟؟؟ اپنی بات مکمل کر کے اپنا خدشہ بھی ظاہر کیا نگینہ بائ نے۔۔۔
تو پھر اس سب کے لیے تیار ہو جائیں جو آپ اس ویڈیو میں دکھا آئیں ان کو۔۔۔۔
سخت لحجہ میں کہہ کر وہ وہاں سے چلی گئی۔۔۔۔
پیچھے نگینہ حیرت اور شاک کے اثر کھڑی یہ سوچ رہی تھی۔۔۔۔
کیا کوئی اتنا بھی گر سکتا ہے۔۔۔۔؟؟
ظلم اور سفاک ہو سکتا ہے۔۔۔۔
وہ فیصلہ کر چکی تھی۔۔۔اب پیچھے ہٹنے والی نہیں تھی۔۔۔
کمرے میں ادھر اودھر ٹہلتی اپنی ماں کا انتظار کر رہی تھی۔۔۔
جب دروازہ کھلا اور چہرے پہ مغرور مسکراہٹ سجائے وہ اندر داخل ہوئی۔۔۔۔
مجھے آپ کی بات منظور ہے اس نے بنا ماں کی طرف دیکھے بات کا آغاز کیا۔۔۔۔
ہمیں پتہ تھا ہماری بیٹی ہمارے حکم کے خلاف کبھی جا ہی نہیں سکتی۔۔۔۔
آپ نے ہمیں آج بہت بڑی خوشی دی ہے۔۔۔۔
ہمیں یقین ہے جو امیدیں ہم نے آپ سے لگائی ہیں آپ ان سب امیدوں پر پورا اتریں گی۔۔۔۔۔
محبت سے کہتی وہ اس کا ہاتھ تھامنے لگی۔۔۔۔
جسے اس نے نفرت سے جھٹک دیا۔۔۔۔
ٹھیک ہے غصہ تھوک دیجئیے اور آرام کریئے۔۔۔۔
شام میں ہم آپ کو استاد اندو جی کی شاگردگی میں بھیج دیں گے۔۔۔۔
وہی آپ کو رقص اور ادب و آداب سب سکھائیں گے۔۔۔۔
وہ خوشی اور محبت سے بول کر وہاں سے چلی گئی۔۔۔۔
پیچھے وہ اپنا سر تھام کر بیٹھ گئی۔۔۔۔
اپنی عزت بچانے کا اس سے بہتر کوئی اور راستہ نظر نہ آیا۔۔۔۔۔

–**–**–
جاری ہے
——
آپکو یہ ناول کیسا لگا؟
کمنٹس میں اپنی رائے سے ضرور آگاہ کریں۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Subscribe For Latest Novels

Signup for Novels and get notified when we publish new Novel for free!




%d bloggers like this: