The Moon Of Lunar Night Novel by Bella Bukhari – Episode 11

0
دی مون آف لونر نائیٹ از بیلا بخاری – قسط نمبر 11

–**–**–

 

اپنے کمرے میں آنے کے بعد حورا مرر کے سامنے جاتی ہے وہ بے خود سی ہوکر اپنے آپ کو دیکھتی ھے اور اسے اس اجنبی کے الفاظ یاد آتے ہیں اسے ابھی بھی اسکے الفاظ اپنے کانوں میں گونج رہے ہوتے ہیں
یہ کیسا سحر تھا اس چہرے میں اور اسکی آنکھیں بھی کتنی خوبصورت تھیں
میں تو ان آنکھوں میں کہیں کھو سی گئی تھی ۔۔۔۔۔۔
افففففففففف
یہ میں کیا سوچ رہی ہوں
کہیں میں پاگل نہ ہوجاو اف اف ۔۔۔۔
چھوڑو حورا ان سب باتوں کو وہ کوئی اجنبی تھا جو راستہ بھٹک کے یہاں آگیا
وہ ایسےلوگ ہی خود سے باتیں کرتی ہوئی بیڈ پر جاتی ہے اور اسکی سوچوں میں بس وہی چہرہ بس جاتا ہے جسے وہ چاہ کے بھی بھول نہیں پارہی تھی ۔۔۔
حورا کی نظر اپنے ہاتھ پر جاتی ہے جسے ظہان نے پکڑ کر کھینچا تھا
یہ یہ خون کہاں سے آگیا وہ بھاگ کر واشروم جاتی ہے اور اپنے ہاتھوں اور بازوں کو دھوتی ھے تاکہ خون کے نشان مٹ جائیں
ممم مطلب وہ اجنبی زخمی تھا
بیڈ پہ بیٹھتے ہی وہ سوچتی ھے اور ان ہی سوچوں میں گم وہ نیند کی وادیوں میں چلی جاتی ھے ۔۔۔۔۔۔۔
💞💞💞

سکندر شاہ بے تابی سے ظہان کے ہوش میں آنے کا انتظار کررہے ہوتے ہیں کیونکہ اسکے بعد ہی وہ اگے کیا کرنا چاہتے ہیں اسکا فیصلہ کرنا تھا
شاہ جی ۔۔۔۔۔۔
ظہان کو ابھی تک ہوش کیوں نہیں آیا؟
آجائگا آپ ٹینس نہ ہو
آپ ڈاکٹر کو بلائیں ابھی تک میرے بیٹے کو ہوش کیوں نہیں آیا؟
میں بلاتا ہوں ۔۔۔۔
ابھی سکندر صاحب ڈاکٹر کو بلانے جارہے ہوتے ہیں کہ وہ خود آجاتے ہیں
ڈاکٹر میرے بیٹے کو ہوش کیوں نہیں آیا ابھی تک ایک گھنٹہ ہونے کو آیا ھے؟
آپ پریشان نہ ہوں کچھ دیر تک پیشنٹ کو ہوش آجائگا ۔۔۔
Everything is fine so don’t worry Mr.Shah….

ڈاکٹر کے جانے کے بعد سکندر صاحب اپنی وائف حیات بیگم کو ریسٹ کا کہتے ہیں لیکن وہ نہیں مانتیں ۔۔۔
شاہ جی ۔۔۔۔
جب تک ظہان کو ہوش نہیں آتا میں کہیں نہیں جاو گی
کچھ ہی دیر میں ظہان کو ہوش آتا ھے اور
آنکھیں کھولنے پر اسے اپنے مما بابا کا چہرہ دکھتا ھے
شاہ جی ۔۔۔
دیکھیں ظہان کو ہوش آگیا
سکندر شاہ جلدی سے ظہان کےصوفے قریب آتے ہیں
اب کیسا فیل کررہے ہو میرے شیر؟
بابا سائیں میں اب بلکل ٹھیک ہوں آپ پریشان نہ ہوں
ظہان میرا بچہ شکر ہے تمہیں ہوش آگیا
تمہیں درد تو نہیں ہورہا
No mama I’m fine don’t worry my love”
مسز مجھے لگتا ھے اب آپکو جانا چاہیے کچھ دیر ریسٹ کر لیں میں ظہان کے ساتھ ہوں
نہیں شاہ جی ۔۔۔۔
میں کہیں نہیں جارہی میں اپنے بیٹے کے پاس رہوں گی ۔۔
سکندر شاہ التجائی نظروں سے ظہان کو دیکھتے ہیں کیونکہ اب وہی اپنی مما کو ہینڈل کرسکتا تھا
مما جانی
مما میری پیاری موم بات تو سنیں ۔۔۔۔۔
نو ظہان میں کچھ نہیں سن رہی
بابا سائیں آپ دیکھ رہے ہیں مما میری کوئی بات نہیں سن رہی مطلب وہ یہ مجھ سے پیار نہیں کرتی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔
سکندر شاہ کے چہرے پر مسکراہٹ آجاتی ھے کیونکہ انکی بیگم کی حالت دیکھنے والی ہوتی ھے ۔۔۔۔
یہ کیا کہہ رہے ہو ظہان؟
جبکہ تم جانتے ہو میں اس دنیا میں سب سے زیادہ پیار تم سے کرتی ہوں مما کی جان اور یہ بات کرتے ہوئے وہ سکندر صاحب جتاتی نظروں سے دیکھتی ہیں ۔۔۔۔
اب بیچارے سکندر صاحب کی شکل دیکھنے والی ہوتی ھے
کیونکہ حیات بیگم اپنا بدلہ چکا دیتی ہیں
اور ظہان اپنے والدین کی نوک جھوک کو انجوائے کررہا ہوتا ہے ۔
مما مجھے آپکی بات پر یقین نہیں ھے
مگررررررررر
اور کچھ نہیں آپ ابھی حویلی جارہی ہیں کہ نہیں
ٹھیک ھے ٹھیک ھے میں جارہی ہوں
سکندر شاہ اپنی بیگم کے پاس آتے ہیں
آپ مجھ سے بات نہ کریں
ڈرائیور کو بلائیں ۔۔۔۔
اسطرح حیات بیگم گھر چلیں جاتی ہیں ۔
حیات بیگم کے جانے کے بعد سکندر صاحب سیریس ہوجاتے ہیں اور ظہان بھی خاموش ہوجاتا ھے ۔۔
ظہان میرے منع کرنے کے باوجود بھی تم اسلام آباد چلے گئے اور پھر اتنی رات میں واپسی کی کیا ضرورت تھی لگتا ھے تم نے دشمن کو ہلکا لے لیا ھے اگر تمہیں کچھ ہوجاتا تو ہمارا کیا بنتا
جب تم پر حملے کی خبر سنی تو ایسا لگا جیسے میری آنکھوں کی روشنی ختم ہوگئی ہو اور تمہاری مما انکا تو رو رو کے برا حال تھا اور میں نے خود کو اور تمہاری مما کو کیسے سنبھالا یہ میں جانتا ہوں
سکندر صاحب کی آواز میں لڑکھڑاھٹ سی ہوتی ھے
ظہان کو محسوس ہورہا ہوتا ھے اسکے باباجان ضبطکے کڑے مراحل سے گزر رہے ہوتے ہیں اسلیئے وہ کافی شرمندہ بھی ہوتا ھے ۔۔۔۔

” تمہیں کیا پتہظہان کے اولاد کی چھوٹی سی بھی تکلیف والدین کیلئے کتنی اذیت ناک ہوتی ھے بچپن میں ہم تمہارا کتنا خیال رکھتے تھے کہ کھیلتے ہوئے بھی تمہیں کوئی چوٹ نہ لگے تمہاری مما ہر وقت سائے کی طرح تمہارے ساتھ رہتیں تھیں مجھے پتہ ھے میں اپنے پیار کا اظہار اتنا زیادہ نہیں کرتا مگر تمہاری میری زندگی میں کیا اہمیت ھے اسکا تم اندازہ کبھی بھی نہیں لگا سکتے ۔”

تم ہمارے خاندان کے اکلوتے چشم چراغ ہو اور دشمنوں کی ہمت تو دیکھو وہ تمہیں یعنی سکندر شاہ کہ جگر کے ٹکڑے پر وار کیا خیر انکا بھی میں نے بندوبست کرلیا ھے
اب جو ہونا تھا ہوگزرا اب تم میری اجازت کے بغیر کہیں نہیں جاو گے
Is that clear Zuhan?
Yes
Yes Baba sain!

اور ہاں مکرم کو میں نے پتہ لگوانے کا کہہ دیا ھے جلد ہی تم پہ وار کرنے والوں کو عبرت ناک سزا دوں گا تاکہ وہ خواب میں بھی تم پہ حملہ کرنے کا سوچ نہ سکیں ۔۔۔۔۔

❤️❤️❤️❤️❤️

بجو ۔۔۔۔
آپ ابھی تک سو رہی ہیں ۔۔۔

کیا مسئلہ ہے فیروزے ۔۔۔۔
مجھے سونے دوں ۔۔

نو ۔۔۔آپ نے بہت نیند کرلی ہے اب آپ اٹھیں ۔ دیکھیں دوپہر ہوگئی ہے اور آپ بھول گئی آج ہم نے آج شاپنگ پر بھی جانا ھے ۔

کیا ۔۔۔۔۔۔
دوپہر ہوگئی اور میں اتنی دیر سوتی رہی ۔۔۔۔

اف ۔۔۔۔۔۔اٹھیں بھی بجو آپ
ویسے بھی اتنے لیٹ ہوگئے ہیں
جلدی سے تیار ہوجائیں ۔۔۔

مجھے کہیں نہیں جانا فیروزے ۔۔۔۔
تم اپنی فرینڈز کے ساتھ چلی جاو ۔۔۔
Plz…….

مگر بجو ۔۔۔۔
فیروزے بحث نہیں
میری طبیعت ٹھیک نہیں ہے ۔
کیا ھوا ہے آپ کو بجو ۔۔۔
رنگ بھی زرد پر ڑہا ہے۔۔۔
میں ابھی ماما کو بتاتی ہوں ۔
ابھی وہ روم سے جاری ہوتی ھے کہ حورا اسے روکتی ھے ۔
نہیں ماما کو پریشان کرنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے ۔رات کو لیٹ نیند آئی تھی بس ۔۔۔۔اور کچھ نہیں ۔
ابھی فریش ہوگی تو ٹھیک ہو جاو گی ۔

اوک بجو ۔۔۔
آج تو آپ کو معاف کر دیا
صرف اور صرف آپ کی خراب طبعیت کی وجہ سے ۔۔
فیروزے نیکسٹ ٹائم ہم دونوں اکٹھے شاپنگ کے لیئے جائے گے
پرامس ڈیئر ۔۔۔۔۔
ہمم یہ ہوئی نہ بات بجو ابھی تو میں شاپنگ کے لیئے جاری ہوں شام تک آپ مجھے ٹھیک ملے
شام کو ملاقات ہو گی ۔
اوکے بائے ۔۔۔
بائے ۔۔۔فیروزے ۔۔۔۔

اپنے کمرے میں جاکر وہ اپنی فرینڈز کو کال کرتی ھے ۔

فیروزے کی فرینڈز حمنا اور میرا اسکے گھر آجاتی ہیں اسے پک کرنے
چلیں فیروزے ویسے بھی تمہارے چکر میں کافی لیٹ ہوگئے ہیں حمنا اسے تنگ کرنے کیلئے کہتی ھے
ہاہاہاہاہاہا ویری فنی
اب چلو بھی یار ویسے بھی میری نہیں تمہاری وجہ سے ہم لیٹ ہوگئے
اس سے پہلے دونوں کے بیچ جنگ ہوتی میرا نے ان دونوں کو روکا
اگر تم دونوں نے ہر وقت لڑنا ہی ہوتا ھے تو مجھےکیوں بلاتی ہو ۔۔۔۔
اف میں تو تنگ آگئی ہوں تم دونوں کی لڑائی سے میں واپس جارہی ہوں ۔۔۔۔
اب دونوں میرا کی دھمکی سے سیدھی ہوتی ھیں
اووووپس میراااااااااااااا
We are just kidding my bestie
Don’t be serious dear
I’m I right Hmna?

Ya u r absolutely ri8 Ferozay my lovely frnd my bestie………

اور بس پھر دونوں کی ڈرامے بازی شروع ہوجاتی ہے اور اخر کار دونوں میرا کو منا لیتی ہیں کیونکہ اس سرپھری کا کوئی بھروسہ نہ تھا وہ سچ میں چلی جاتی ۔۔۔۔
Let’s go Mira we are already getting late!

اور پھر باتوں باتوں میں وہ تینوں شاپنگ مال انٹر ہوجاتی ہیں
اور شاپنگ کرنا سٹارٹ کرتی ہیں فیروزے اپنے لیے ڈریس پسند کر رہی ہوتی ہیں تب اسے محسوس ہوتا ھے جیسے کوئی اسے دیکھ رہا ہے وہ شاپنگ مال میں ادھر ادھر نگاہ دوڑاتی ھے مگر سب اپنے اپنے کاموں میں بزی ہوتے ہیں
فیروزے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
کیا سوچ رہی ہو دیکھو یہ ڈریس کیسا ھے دیکھو پارٹی میں یہ والا کیسا لگے گا
فیروزے ۔۔۔۔۔۔
کہاں گم ہو؟
ہا ہاں ۔۔۔۔۔ کیا کہا تم نے
اف تم نے کچھ نہیں سنا اچھا چھوڑو
چلو جلدی سے ڈریس سلیکٹ کرو ہم زرا اس سائڈ پر کچھ نیو دیکھ لیں ۔۔۔۔
کوئی بہت قریب سے فیروزے کو دیکھ رہا ہوتا ھے
اور فیروزے جس ڈریس پہ ہاتھ رکھتی سیلر بوائے کہتا کہ میم یہ آل ریڈی بک ھے آپ کچھ اور پسند کر لیں
شاید وہ لڑکا کسی کہ اشاروں پہ وہ سب کررہا ہوتا ہے اور بلاخر فیروزے کو وہی لڑکا جو ڈریس دیتا ہے وہ لانگ پنک فراک جسکے بازوں پر بے انتہا خوبصورت نیٹ اور اس پر پیارے سے فلاورز سیٹ ہوتے ہیں جسکی بیک سائیڈ پر بہت ہی یونیک سٹائلکی ڈوریاں ہوتی ہیں اور اس ڈریس کی بیک سائیڈ تھوڑی سی ڈیپ ہوتی ہے ۔۔۔۔۔۔۔
پھر فیروزے چینجنگ روم ڈریس کو چیک کرنے جاتی ہے اور پھر وہ جیسے ہی چینجنگ روم میں جاتی ہے کوئی بہت جلدی سے فیروزے کے ساتھ ہی انٹر ہوتا ھے اور ڈور لاک کردیتا ھے اور اچانک سے لائٹ بھی آف ہوجاتی ھے کیونکہ شاید وہ سٹرینجر اپنا چہرا نہیں دیکھانا چاہتا تھا اسلیئے اس نے لائٹ آف کروادی
ادھر فیروزے جو پہلے سے ہی کسی کی موجودگی کی وجہ سے خوفزدہ ہوتی ھے لائٹ کہ جانے کی وجہ سے وہ بے انتہا خوفزدہ ہوجاتی ھے اسے ایسا لگ رہا ہوتا ھے جیسے ابھی بس وہ اندھیرےکنویں میں ھو اور وہ مر جائگی کیونکہ شاید مقابل یہ نہیں جانتا تھا کہ اس کی بےبی گرل کو لائٹ فوبیا ھے اگر وہ جان لیتا تو شاید وہ ایسا کبھی نہ کرتا
لائٹ کیوں بند ہوگئی میرا کوئی ھے مجھے باہر نکالو
Open the door plz Mira
Humna plzzzzzz
Someone heel……..
ابھی وہ کچھ بولتی کسی نے اپنے بھاری ہاتھ اسکے منہ پہ رکھ دیا
ابھی وہ کچھ کہتا فیروزے جلدی سے اس سٹرینجر کے گلے سے لگ جاتی ھے اور اسے ٹائٹلی ہگ کر کے رونا شروع کردیتی ھے ادھر وہ سٹرینجر حیران پریشان ہوجاتا ھے کیونکہ فیروزے نے اورزیادہ زور سے رونا سٹارٹ کر لیتی ھے
Ppp plzzzzz hold me tightly ____
Don’t move
Stay with me

پلیز اور پھر سے وہ رونا شروع کردیتی ھے تھینک گاڈ ت تم یہاں ہو نہیں تو مم م میں مر جاتی ۔۔۔۔۔۔۔۔
Stop it…….
I said stop it don’t say again that you wanna die otherwise i will destroy all the bloody hell of this universe
Don’t say my love
Don’t say again these stupid words…….
اور پھر وہ فیروزے کو اپنے سینے میں اسطرح بھنچ لیتا ھے کہ فیروزے کو اپنی پسلیاں ٹوٹتی ہوئی محسوس ہوتی ہیں جیسے اس سٹرینجر سے فیروزے واقعی کہیں اس سے دور نہ ہوجائے

و و وہ میں
ابھی فیروزے کچھ کہتی اس سٹرینجر نے اسے بولنے سے روک دیا

Shhhhhhhhhhhh
Kizlarim!
Ma bouee` de sauvetag
شش ۔۔۔۔۔
مائی بےبی گرل`
مائی لائف لائن “`

I’m with you my baby girl ‘
اور پھر کیا فیروزے جیسے ہی یہ الفاظ سنتی ھے اسے وہ ریسٹورینٹ والا شخص یاد آجاتا ھے ابھی وہ کچھ کہتی اس سے پہلے اس سٹرینجر نے فیروزے کہ چہرے کو اوپر کیا اور اسکی آنکھوں پر باری باری بوسہ دیا اور پھر اپنے ہونٹوں سے فیروزے کے آنسو چنے پھر اسکے ماتھے پر پیار بھرا لمس چھوڑتا ھے کہ اچانک لائٹ آتی ہے اور وہ جلدی سے وہاں سے چلا جاتا ہے ۔
💗💗💗

اور فیروزے حیران پریشان سی کھری ہوتی ھے کہ باہر سے میرا اور حمنا اسے آواز دیتی ہیں اور فیروزے اس ڈریس کو واپس سے لے کر آجاتی ھے
فیروزے میری جان مائی بیسٹی تم ٹھیک تو ہونا
کیا ہوا ھے خاموش کیوں ہو اوریہ ڈریس کیوں نہیں ٹرائی کیا
فیروزے ۔۔۔۔۔۔
ہو ہاں کیا ہوا ۔۔۔۔۔
اف لگتا ھے یہ کوئی اور ھے چل میرا چلیں
او ہیلو مس حمنا عرف آفت کی پرکالہ ۔۔۔۔۔ کچھ نہیں ہوا مجھے اورہاں ایک بات یاد رکھنا اس دنیا میں صرف اور صرف ایک فیروزے ھے
One & only one
Original piece
Understood u duffer…..?

ہاہاہاہاہاہا ۔۔۔۔۔۔۔۔
دونوںکا قہقہ گونجتا ھے
ہمم اب لگ رہی ہونا ہماری فیروزے ۔۔۔۔
پھر تینوں ہی قہقہ لگاتی ہیں
اور ادھر فیروزے کو خوش دیکھ کر وہ بھی سکون کا سانس لیتا ھے
💗💗💗💗

ادھر فارب بخاری اپنی میٹنگز کافی حد تک بزی ہوجاتا ھے اور وہ نیوز جس میں فارب بخاری کو اسکے برینڈ کی ماڈل زوئی سے کمپئر کیا جارہا تھا اس نیوز کو تو اس دن ہی فارب بخاری نے بند کروادیا تھا اور اس ریپورٹر اور اسکے پیچھے جسکا بھی ہاتھ تھا ان سب کو انکے انجام تک اس نے پہنچا دیا تھا لیکن ایک شخص کا اسے ابھی بھی پتا نہیں تھا لیکن ادھر بھی فارب بخاری تھا جسکے آگے کوئئ ٹک پائے ایسا کہاں ممکن تھا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔
💗💗💗💗

–**–**–
جاری ہے
——
آپکو یہ ناول کیسا لگا؟
کمنٹس میں اپنی رائے سے ضرور آگاہ کریں۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Subscribe For Latest Novels

Signup for Novels and get notified when we publish new Novel for free!




%d bloggers like this: