The Moon Of Lunar Night Novel by Bella Bukhari – Episode 28

0
دی مون آف لونر نائیٹ از بیلا بخاری – قسط نمبر 28

–**–**–

 

💝💝Zuhan 💞 💞Hurra wedding special 💝💝

دراب ۔۔۔۔۔
اب کیسی طبعیت ہے ۔۔۔؟؟؟

بابا جان میں ٹھیک ہوں آپ پریشان مت ہوں ۔

کہاں ٹھیک ہوں دراب دیکھو تو کیا حالت ہوگئی ھے اس ظہان کو تو میں چھوڑو گا نہیں بڑا اڑ رہا ھے اس کے ایسے پر کاٹوں گا ساری زندگی یاد رکھے گا ۔۔۔

بابا جان آپ ایسا کچھ نہیں کریں گے میں نے اسے معاف کر دیا ھے ۔۔۔

دراب ۔۔۔۔
میں اب مزید اس جھگڑے کو نہیں بڑھانا چاھتا ۔۔۔۔
مجھے امید ھے آپ میرا ساتھ دیں گے ۔۔۔

دلاور خان اپنے کمرے میں جاتے ہیں تو انہیں بس دراب کا نیا روپ بہت عجیب لگ رہا تھا

مجھے تو کچھ بھی ٹھیک نہیں لگ رہا ۔حد ھے یہ لڑکا آئے دن ایسے جھٹکے دیتا ھے کہ سنبھلنا مشکل ہوجاتا ھے ۔۔۔
پتا نہیں اب اسکے دماغ میں ایسا کیا چل رہا ھے ۔۔۔

دراب خان اور کسی کو معاف کر دے۔۔۔۔۔۔ ناممکن !!

دراب تم میرے بیٹے ہوں اور میں تمہاری رگ رگ سے واقف ہوں ۔

نوید ۔۔۔۔۔

جی سر ۔۔۔

کام ہوا یا نہیں ۔۔

جی سر ہوگیا ھے کام ۔۔

ہہم ۔۔۔

دراب انکی مہندی کے فنکشن کی ساری ویڈیو لائیو دیکھ رہا تھا ۔۔۔
جب ظہان اور حورا ڈانس کر رہے تھے تو اس وقت دراب کی آنکھوں میں آنسو تھے ۔۔۔۔

وہ حورا کو کال کرتا ھے ۔۔۔۔

حورا جو ابھی مہندی لگوانے کے بعد سونے کی کوشش کر رہی تھی کال کی وجہ سے اٹھتی ھے اور بنا دیکھے کال اٹینڈ کرتی ھے ۔۔

ہیلو ۔۔۔۔

کیوں حورا ایسا کیوں کر رہی ہوں تم میرے ساتھ ۔۔۔۔

د۔۔۔۔دراب

ظہان کہتا ھے جسے آپ پیار کرتے ہیں انکی خوشی میں خوش رہنے کی کوشش کرتے ہیں ۔۔۔۔

میں بہت کوشش کر رہا ہوں مگر مجھ سے برداشت نہیں ہورہا

کیوں تم آخر میری زندگی میں آئی جب تم نے کبھی میرا ہونا ہی نا تھا ۔۔۔

حورا میں تم سے بے انتہا محبت کرتا ہوں ۔۔۔

حورا تم سن رہی ہوں ۔۔۔۔

حورا ۔۔۔۔۔

وہ فون بند کردیتی ھے

یہ تم نے اچھا نہیں کیا حورا ۔۔

وہ رو رہی تھی کیونکہ دراب کے لہجے نے اسے ڈرا کے رکھ دیا تھا یہ آخر کیوں میری خوشیوں کے پیچھے پڑ گیا ھے ۔۔۔۔

تب ہی ظہان کھڑکی سے روم میں آتا ھے ۔۔۔۔

اینجل ۔۔۔۔۔۔
ظہان ۔۔۔۔

شکر ھے آپ آگئے ۔۔۔

کیا ہوا ھے اور تم رو کیوں رہی ہوں ۔۔۔؟؟؟

ک۔۔۔کچھ بھی تو نہیں ہوا
وہ بس مجھے ڈر لگ رہا تھا ۔۔

وہ اپنی اینجل کو ہگ کرتا ھے ۔۔۔

اینجل جب تک میں تمہارے ساتھ ہوں تمہیں ڈرنے کی ضرورت نہیں ھے ۔۔۔۔

ظہان ۔۔۔۔
مجھے یہ سب ایک خواب لگ رہا ھے اور مجھے نا جانے ایسے کیوں لگ رہا ہے میں جب آنکھیں کھولوں گیا تو سب ختم ہوجائے گا

آ۔۔۔آپ مجھ سے دور بہت دور چلیں جائ۔۔۔۔۔

ابھی وہ اپنے الفاظ مکمل کرتی کہ ظہان اسکی بولتی بند کردیتا ھے ۔۔۔۔۔

اینجل آئندہ کبھی بھی میں آپ کے منہ سے ایسے جدا ہونے والے الفاظ نا سنوں ۔۔۔

پھر وہ ظہان کا لمس اب اپنی گردن پر محسوس کر رہی تھی ۔۔

آپ ہمیشہ میرے پاس میرے ساتھ رہیں گی۔۔۔

وہ اسکے کان میں آہستہ آہستہ بول رہا تھا اور اسکے لب اسکے کان کی لو کو چھو رہے تھے ۔۔

وہ اسکی باہوں میں لرز رہی تھی۔۔۔۔

اینجل ابھی تو میں نے کچھ کیا بھی نہیں اور تمہاری یہ حالت ھے ۔۔۔

ظ ۔۔۔ظہان آ۔۔آپ مجھے ڈرا رہے ہیں ۔۔۔۔

نہیں میری کہاں مجال میں اپنی اینجل کو ڈراو ۔۔۔

ظہان اسکا دھیان بٹانا چاھتا تھا اور وہ اس میں کافی حد تک کامیاب ہوگیا تھا۔۔۔

چلو اب تم سو جاو اور ہماری نئی زندگی کے خواب دیکھو ۔۔۔

وہ اسے خود سے الگ کرتا ھے مگر حورا اسکا ہاتھ تھام لیتی ھے ۔۔۔

آپ پیلز میرے پاس رہے ۔۔۔

وہ اسکے کاندھے پر سر رکھتی ھے اور ظہان بھی اسے اپنی باہوں کے حصار میں لیتا ھے ۔۔

وہ دونوں ہی ایک جیسی کیفیت سے گزر رہے تھے ظہان اپنے خواب کی وجہ سے ڈسٹرب تھا اور حورا اس دراب کی وجہ سے پریشان تھی ۔۔۔

اینجل ۔۔۔۔

جی ۔۔۔۔

میں سوچ رہا تھا کہ کاش نکاح کے وقت ہی رخصتی کروالیتا ۔۔۔

اچھا اور یہ نیک خیال اب آیا آپ کو ۔۔۔۔؟؟
اور کیوں ۔۔۔۔

یار شیری کی آج والی شرائط سنی تھی تم نے ۔۔۔۔۔

میں ایک پل بھی تم سے دور نہیں رہ سکتا اور جناب کی فرمائش تھی ہر ہفتے اس کے پاس چھوڑ آو ۔۔۔۔

حورا کو ہنسی آجاتی ھے ۔۔۔۔

سوری ظہان مگر اس وقت آپ کی شکل دیکھنے والی تھی ۔۔

تو تم بتاو تم جاو گی ۔۔۔؟؟؟

کیوں آپ کو کیا مسئلہ ھے شیری تو میری جان ھے ۔۔۔۔

اینجل ۔۔۔۔
آپ کی جان صرف میں ہوں۔۔۔

اف آپ اپنے چھوٹے سے کیوٹ سے بھائی سے جیلس ہو رہے ہیں ۔۔۔

اینجل تم صرف میری ہوں تم تمہارا پیار تمہارا ساتھ صرف میرے لئیے اور اس معاملے میں ۔۔۔
میں بے بس میں تمہیں کسی بھی صورت شیئر نہیں کرسکتا ۔۔۔۔

ظہان جنونی ہورہا تھا اور اینجل کے گرد وہ اپنی باہوں کا گھیرا تنگ کر رہا تھا ۔۔

وہ بھی اسکی پناہوں میں خود کو محفوظ تصور کر رہی تھی

اینجل ۔۔۔۔

ظہان آپ رو کیوں رہے ہیں آپ جیسا کہے گے میں ویسے کرو گی آپ پلیز رونا بند کریں وہ ظہان کے آنسو صاف کرتی ھے اور پھر اسکے ماتھے پر کس کرتی ھے ۔۔۔۔

ظہان سانس روکے اینجل کو دیکھ رہا تھا ۔۔۔

اب آپ جائیں مجھے نیند آرہی ھے ۔۔۔

اسے ظہان کی لو دیتی نگاہیں گھبراہٹ میں مبتلا کر رہی تھی ۔۔۔۔

نو اینجل ۔۔۔۔
اب میں نہیں جاسکتا ۔۔۔۔

وہ حورا کو کھینچتا ھے اور اسکی گردن پر کس کرتا ھے ۔۔۔

ظ۔۔ظہان
پلیز ۔۔۔

اوکے تم سو جاو تمہارے سونے کے بعد چلا جاو گا ۔۔۔

مگر ۔۔۔۔
اوکے ۔۔۔

وہ تکیے پر سر رکھتی ھے ظہان بھی اسکے پاس بیٹھتا ھے اور جب تک اسے نیند نہیں آتی وہ اسکے بالوں میں انگلیاں چلاتا رہتا ۔۔۔

اسکا ہاتھ جو حورا نے تھام رکھا تھا وہ نرمی سے اسکی گرفت سے آزاد کرتا ھے ۔۔۔

اینجل ۔۔۔۔
I love you soooòooòo much

وہ اسکے چہرے کے ہر نقش کو اپنے لبوں سے چھوتا ھے اور پھر چلا جاتا ھے ۔۔۔

پاپا ۔۔۔۔

What a pleasant surprise

وہ حسن صاحب کو دیکھ کر بہت خوش ہوگئی تھی ۔۔۔

پاپا میں آپ کو بہت مس کر رہی تھی ۔۔۔

بس مجھے پتا چل گیا اس لئیے میٹنگز کینسل کرکے جلدی سے آگیا ۔۔۔

تھینکس پاپا ۔۔۔

Dad not fair

سارا پیار صرف آیت کے لئیے آپ ہم دونوں کو بھول گئے۔۔۔۔

ادھر آو میرے پاس
فارب اور شیری اپنے ڈیڈکو ملتے ہیں ۔۔

کافی دیر باتیں کرتے رہتے ہیں

سلام علیکم بھائی صاحب ۔۔۔

حیات بیگم وہاں آتی ہیں ۔۔

وسلام بھابھی ۔۔۔

آیت پاپا کو ریسٹ کرنے دو کچھ دیر تک روانہ ہونا ھے

اوکے بچوں ۔۔۔
آپ سب جب تک ریڈی ہوں میں بھی تک آرام کرتا ہوں ۔۔۔

انکل آپ ۔۔۔
ظہان ۔۔۔۔
تمہاری شادی ھے اور میں نا آو ایساہو سکتا تھا ۔۔۔

وہ ظہان کو ملتے ہیں ۔۔۔

ہاں کیوں نہیں ڈیڈ آخرآپ کے چہیتے کی شادی تھی اس لیئے تو آپ آگئے ۔۔۔۔

کوئی جیلس ہورہا ھے ۔۔۔

ماما آپ دیکھ رہی فارب کو ۔۔

صحیح توکہہ رہا ھے میرا بیٹا بھائی صاحب تو بس ظہان سے زیادہ پیار کرتے ہیں ۔۔۔

ہاہاہاہا ۔۔۔۔

اوکے انکل آپ ریسٹ کریں اسکے ڈرامے تو چلتے رہیں گے ۔۔۔

فارب اسکی گردن دبوچتا ھے اب بول کیا کہہ رہا تھا ۔۔۔

اف برو چھوڑیں ۔۔۔۔

آیت تم تو چپ ہی رہو ۔۔۔

جب ابھی ڈیڈ آتے ہیں آجاتا ھے انکے پاس اور تمہاری وجہ سے مجھے لیکچر دئیے جاتے ہیں کہ ظہان کی طرح بنو اور اس سے کچھ سیکھو ۔۔۔

جگر ۔۔۔۔
اس میں میرا کیا قصور ھے اب میری پرسنالٹی ہی ایسی ھے کہ جہاں جاتا ہوں سب فدا ہوجاتے ہیں ۔۔۔

یار گردن تو چھوڑ ۔۔۔۔

فارب اسکی گردن چھوڑتا ھے

ویسے فدا ہونے سے یاد آیا کل رات تو بڑا کسی پر فدا ہوگیا تھا ۔۔۔

یہ کیا بکواس کر رہا ھے ظہان ۔۔۔

مجھے تو سب نظر آرہا تھا اب تم انجان بن جاو تو اور بات ھے ۔۔۔

ایسی کوئی بات نہیں ۔۔۔

زوئی بڑی محبت سے تجھے دیکھ رہی تھی اور تم دونوں پرفیکٹ کپل لگ رہے تھے ۔۔۔

ماما کو تو زوئی اتنا پسند آئی تھی وہ تو میری شادی کے بعد تمہارا رشتہ لینے جائے گی ۔۔۔

کتنا مزا آئے گا جب زوئی میری بھابھی بنے گی ۔۔۔۔

ظہان ۔۔۔۔
آج تو نہیں بچے گا میرے ہاتھوں سے ۔۔۔۔

ظہان بھاگ کر اپنے کمرے میں جاتا ھے فارب بھی پہنچ جاتا ھے مگر وہ دروازہ بند کر دیتا ھے کیونکہ ابھی اسے اپنی جان بہت پیاری تھی ۔۔۔۔

کھول دروازہ ۔۔۔۔
میں بھی حورا کو تیرے حسن کے قصے اور تجھ پر فدا ہونے والی تتلیوں کے بارے میں بتاو گا پھر دیکھنا وہ تجھے آج رات کمرے میں گھسنے نہیں دے گی ۔۔۔۔

بس ظہان دروازہ کھولتا ھے ۔۔۔

فارب میں تو مذاق کررہا تھا

میں سچ بول رہا ہوں مسڑ ظہان حیدر شاہ ۔۔۔۔

یہ پاگل تو ناراض ہوگیا ھے اور سچ میں مجھے مروائے گا ۔۔۔

فارب ۔۔۔۔
جگر ۔۔۔۔

مجھے کوئی بات نہیں سننی ۔۔۔

ایک تو میں اس دراب کی وجہ سے پریشان ہو اوپر سے تو بھی ناراض ہوگیا ھے ۔۔

کیا کیا ھے اس دراب نے حورا تو ٹھیک ھے نا ۔۔۔۔

سب اوکے ھے فارب لیکن مجھے بے چینی ہو رہی ھے ۔۔۔

جگر تو پریشان نا ہو فارب اسے گلے ملتا ھے سیکورٹی کے سخت انتظامات ہیں وہ نہیں آسکتا تو بس اب جلدی سے تیار ہو تیری اینجل تیرا انتظار کر رہی ہوں گی ۔۔۔

اینجل کے ذکر پر ہی اسکے چہرے پر مسکراہٹ آگئی تھی ۔۔۔

فارب وہ لہنگا جو میں نے سپیشلی حورا کے لئیے ڈیزائن کروایا تھا وہ پہنچ گیا ۔۔۔۔؟؟

ہاں یار مکرم کو بیجھا تھا اور وہ دے آیا ھے چل تو ریڈی ہوں میں بھی تیار ہوکر آتا ہوں ۔۔۔

ادھر فیروزے بھی ریڈی تھی اور گھر کی ڈیکوریشن دیکھ رہی تھی پہلے تو ہوٹل میں ارینجمنٹس کی گئی تھی مگر حورا کی خواہش تھی کہ وہ گھر سے رخصت ہونا چاھتی تھی تو اب گھر بلکہ بینگلو کو خوبصورتی سے ڈیکوریٹ کیا گیا تھا ۔۔۔

پرنسز ۔۔۔۔

پاپا ۔۔۔۔

حورا کو ابھی بیوٹیشن تیار کرکے گئی تھی وہ پیریٹ کلراور کے لہنگے میں جس پر آف وائٹ کلر کی کڑھائی اور بیٹس کا کام کیا گیا تھا ساتھ میں ڈائمنڈ جیولری پہنی ہوئی تھی

بے انتہا حسین لگ رہی تھی

زوہیب صاحب تو بس پیار سے اسے دلہن کے روپ میں دیکھ رہے تھے ۔۔۔

حورا میری پیاری بیٹی
وہ اسکے ماتھے پر پیار کرتے ہیں اور پھر اسکے ساتھ بیڈ پر بیٹھتے ہیں ۔۔۔

وقت کتنی تیزی سے گزر گیا پتا بھی نہیں چلا پرنسز کل ہی تو بات ھے آپ میرا ہاتھ تھام کر چلنا سیکھ رہی تھی اور جب آپ نے پہلی بار چلنا شروع کیا تھا آپ کی ممی اور میں کتنا خوش ہوئے تھے ایک بار آپ کو چوٹ لگ گئی تھی آپ اتنا رو رہی تھی کہ مجھ سے برداشت نہیں ہوا پھر میں نے خود سے وعدہ کر لیا کہ اپنی پرنسز کی آنکھ میں کبھی آنسو نہیں آنے دوں گا آپ ہماری پہلی اولاد ہیں اور مجھے تو آپ جان سے بھی زیادہ پیاری ہیں اس لیئے آپ کا خیال بہت زیادہ رکھتا ہوں اب آپ آج رخصت ہوجائیں گی اپنی نئی زندگی شروع کریں گی
پھر ساتھ ملکر باتیں کرنے کا اسطرح موقع نہیں ملے گا اس لئیے میں نے سوچا آج جی بھر کر اپنی بیٹی سے باتیں کرو گا حورا آپ کو کوئی بھی مسئلہ ہو آپ ہمیشہ کی طرح مجھے بتائے گی آپ کی شادی ہورہی ھے تو اسکا یہ مطلب نہیں کہ یہ گھر یا ہم پرائے ہوگئے ہیں آپ میری پیاری بیٹی ہیں اور ہمیشہ رہیں گی ۔
ظہان اچھا لڑکا ھے اور میں نے اسکی آنکھوں میں تمہارے لئیےمحبت کے ساتھ عزت بھی دیکھی ھے اور حورا تمہیں پتا ھے جس شخص کی آنکھوں میں اپنی بیوی کے لیئے عزت ہوں وہ شخص اس دنیا کا بہترین انسان ھے اور مجھے خوشی ھے میں نے اپنی بیٹی کے لئیے ایسے انسان کا انتخاب کیا ۔۔۔
مجھے یقین ھے میری بیٹی بہت خوش رہے گی ۔۔۔

ہر باپ کی طرح میرے لئیے بھی اپنے جگر کے ٹکرے کو رخصت کرنا بہت مشکل ھے مگر یہی تو ریت ھے جو ازل سے چلتی آرہی ھے ۔۔۔۔

مجھے بھی یہ رسم نبھانی ہوگی۔۔۔۔

I love you my prinxes

I love you to papa 💝

وہ اپنے پاپا کے آنسو صاف کرتی ہے ۔۔۔

پاپا آپ یہاں ہیں نیچے بارات آگئی ھے میں جا رہی ہوں آپ بھی جلدی سے آجائے بجو آپ بہت بہت بہت بہت بہت بہت بہت پیاری لگ رہی ہیں ۔۔۔

فیروزے دھیان سے ۔۔۔۔
اوکے بیٹا مجھے اب نیچے جانا ہوگا ۔۔۔

فیروزے سب باراتیوں کے اسقبال کے لئیے حمنا اورمیرا کے ساتھ ٹھہری تھی ۔۔۔۔

میرا اگر ممی کی ڈانٹ کا ڈر نا ہوتا تو میں مر کر بھی نا ٹھرتی وہ فارب کو دیکھ کر یہ بات کرتی ھے اور جلدی سے ظہان کو پھولوں کا ہار پہناتی ھے ۔۔۔

جیجو چلیں ۔۔۔۔

ارے ارے فیروزے سانس تولینے دو۔۔۔
آیت تم چپ رہو ۔۔۔۔
اووو ہو آیت تمہاری فرینڈ آج چڑیل کیوں بنی ہوئی ھے ۔۔۔

بھائی ۔۔۔
فارب بری بات میری بہن کیوٹ لگ رہی ھے ۔۔۔۔

میرا فارب کو ہار پہناتی ھے بھائی آپ اسے چھوڑے اور سب پلیز انٹر ہوں ۔۔۔۔

میرا کی بچی تم سے تو بعد میں پوچھتی ہوں ۔۔۔

پھر سب باراتیوں کو بیٹھایا جاتا ھے

ظہان حیدر شاہ کی شادی کی لائیو کوریج کی جا رہی تھی اور میڈیا والے اپنے اپنے چینلز پر ایک ایک لمحے کو دیکھا رہے تھے ۔۔۔۔

فارب نے اپنے خاص فوٹوگرافر ابروڈ سے بلوایا تھا اور اب دولہا دلہن کا فوٹو شوٹ ہو رہا تھا ۔۔۔

ظہان نے آف وائٹ شیروانی پہنی ہوئی تھی اور اب وہ الگ الگ پوز میں پکچرز بنوا رہے تھے

پھر تمام فیملی ممبرز کے ساتھ انکا فوٹو شوٹ ہوا تھا

ظہان ۔۔۔۔
میں بہت تھک گئی ہوں ۔۔۔

اوکے اینجل ۔۔۔۔
وہ اشارے سے سب بند کرنے کا حکم دیتا ھے ۔۔۔

پھر شادی کی رسموں کا آغاز ہوتا ھے ۔۔۔۔

اور ۔۔۔۔۔۔

کیا دراب سچ میں اچھا ہوگیا ھے ۔۔۔۔؟؟؟؟

کیا ظہان کا خواب ہوگا سچ جسکی وجہ سے وہ کافی ڈسٹرب ہوگیا تھا ۔۔۔۔؟؟؟

کیا حورا اور ظہان کی شادی ہوجائگی یا وہ ملنے سے پہلے ہونگے جدا ۔۔۔۔۔۔۔۔¿¿¿¿¿

 

Zuhan 💞 Hurra wedding ceremony 💞

ظہان اپنی اینجل کا ہاتھ تھام کر سٹیج کی طرف چلتا ھے اور ہر کیمرہ میں انکا ایک ایک مومنٹ کیپچر کیا جارہا تھا ۔۔

وہ اینجل کے پاس بیٹھا تھا تب ہی سکندر شاہ کے اشارے پر وہ ان کے پاس جاتا ھے۔وہ مہمانوں سے مل رہا تھا اور مبارک باد وصول کر رہا تھا اس کے چہرے پر خوشی ہی خوشی تھی ۔

حورا اپنے عشق کو دیوانہ وار دیکھ رہی تھی وہ جو کسی سے بات کر رہا تھا کسی کی نگاہوں کی تپش سے اس طرف دیکھتا ھے تو اسکی اینجل پوری دینا کو بھلائے اسے دیکھنے میں مگن تھی ۔

وہ مسکرا کر اپنی اینجل کے پاس جاتا ہے جیسے جیسے اسکے قدم قریب آتے جا رہے تھے ویسے ہی حورا کے دل کی دھڑکن بڑھ رہی تھی

اینجل ۔۔۔۔

ظہان خود پر قابو نہیں رکھ سکتا اور اسکے ماتھے پر کس کرتا ھے ۔۔۔۔

ظہان کی اس حرکت پر سب سیٹیاں بجاتے اور ہوٹنگ کرتے مگر وہ ان سب کو اگنور کرتا ھے ۔۔

جب وہ پیچھے نہیں ہٹتا تو حورا اسے بلاتی ھے ۔۔۔

ظہان ۔۔۔۔
جی جان ظہان ۔۔۔

کیا کر رہے ہیں پیچھے ہوں

وہ مسکرا کر اسکے پہلو میں بیٹھتا ھے

اینجل ایسے کیا دیکھ رہی ہوں اگر تم ایسے ہی پیار سے مجھے دیکھو گی تو میں کنٹرول نہیں کر پاو گا ۔۔۔

اف ۔۔۔۔

بھگتو حورا کس نے کہا تھا ایسے دیوانوں کی طرح دیکھو ۔۔۔

وہ اب خود کو ڈانٹ رہی تھی اور اور وہ اسکی ڈانٹ سن کر ہنس رہا تھا

خبردار ۔۔۔۔
اگر میری اینجل کو ڈانٹا ۔۔۔

ہیں ۔۔۔
ظہان آر یو اوکے ۔۔؟؟

آپ میری ہیں اور آپ کو بھی حق نہیں کہ آپ خود کو ڈانٹیں۔۔۔

ظہان آپ مجھ سے اتنا زیادہ پیار کرتے ہیں ۔۔۔

تمہاری سوچ سے بھی زیادہ اینجل ۔۔۔

وہ مسکرا کر اسکی آنکھوں میں دیکھتی ھے ۔۔۔

مگر کوئی انتہائی نفرت سے اس منظر کو دیکھ رہا تھا

آج تو واقعی میں میری حور میری معصوم سی اینجل لگ رہی ہوں ۔۔

تمہیں پتا ھے میں نے خواب میں اسی کلر میں تمہیں دلہن بنے دیکھا تھا اور بس اسکا سکیچ بنا کر سپیشلی یہ لہنگا ڈیزائن کروایا ھے ۔۔۔

مجھے خوشی ہے میرا خواب پورا ہوا ۔۔۔۔

💞💞💞💞💞💞💞💞

بس رومیو جیولیٹ فلحال رسم کے لئیے تیار ہوجائیں ۔۔۔۔

آیت آگے آو اور بجو کا گھوگنٹ ٹھیک کرو۔۔۔۔

فیروزے ۔۔۔۔
کیا مسئلہ ھے گھوگنٹ اب ہٹادو میں نے حورا کا چہرہ دیکھنا ۔۔۔

بھائی بس تھوڑی دیر اور صبر کریں ۔۔۔

رخسانہ بیگم اور حیات بیگم اکٹھے رسم کے لئیے آتی ہیں ۔۔۔

فیروزے مرر کہاں ھے ۔۔۔

جی ممی وہ میرا کو بھیجا ھے ۔۔

میرا ۔۔۔۔

آگئی میں یہ لیں آنٹی ۔۔۔۔

تب ہی فارب شیری انکے پاس آتے ہیں ۔۔۔

رخسانہ بیگم مرر دونوں کے سامنے رکھتی ہیں ۔۔۔

واو انٹرسٹنگ رسم ھے ۔۔
آیت خوش ہوکر کہتی ھے اس کی طرف کوئی محبت بھری نگاہوں سے دیکھتا ھے ۔۔

ظہان مرر میں دیکھتا ھے تب ہی حورا گھونگھٹ ہٹا کر مرر کی طرف دیکھتی ھے اور ظہان اس کے اس روپ میں کھو گیا تھا

🎀 پہلے آنکھیں ہوئی فدا ۔۔۔
پھر سانسیں الجھنے لگی ۔۔۔
ہوا تھا دل کا کام تمام ۔۔
ایک گھوگنٹ میں چھپا ہوا تھا وہ قمری رات کا چاند ۔۔۔
پہلے بس میں تھا
ور ادھورا سا میرا چاند ۔۔۔۔
اب تنہائی کو کردیا وداع ۔۔۔
بس ۔۔۔۔

اب میں ہوں اور میرا قمری رات کا چاند ۔۔۔۔🎀

💞💞💞💞

Beautiful
Mesmerizing

ماشااللہ ۔۔۔۔
حیات بیگم ان دونوں کے سر سے پیسے وارتی ہیں ۔۔

جگر ۔۔۔۔
بس کر تیری ہی ھے ۔۔۔

فارب اسکے کان میں بولتا ھے

پھر مرر ہٹا دیا جاتا ھے ۔۔

اب حورا گھوگنٹ کے بغیر بیٹھی تھی اور ظہان بس اسے دیکھ رہا تھا ۔۔۔

کوئی ناراض ھے ہم سے ۔۔۔۔
ہونہہ میں کیوں آپ سے ناراض ہوں گی ۔۔۔۔

فیروزے مسٹر جلاد کو جواب دیتی ھے

تب ہی زوئی آتی ھے اور اسے دیکھ کر فیروزے کا غصہ سے برا حال تھا ۔۔
فارب اسکے پاس جاتا ھے

Wao zooii looking beautiful…

مجھے یقین نہیں آرہا یہ تم ہی ہوں ۔۔۔

وہ اپنی تعریف پر بہت خوش ہوجاتی ھے

تھینکس فارب ۔۔۔

My pleasure beauty

فارب تو فیروزے کو جیلس کرنے کے لیئے ایسا کر رہا تھا مگر وہ اس بات سے بے خبر تھا اس کی یہ فرینکس اسکے لئیے کیا طوفان لانے والی تھی ۔۔

فیروزے غصے میں وہاں سے واک آوٹ کر جاتی ھے ۔۔

زوئی تم ظہان سے مل لو مجھے ایک کام ھے میں ابھی آیا ۔۔۔
اوکے فارب ۔۔۔

Congratulation to both of you 😍

تھینکس زوئی ۔۔۔
انکل آنٹی نہیں آئے ۔۔۔

ظہان وہ آپ کو تو پتا ھے ناں وہ بزنس ٹور پر ہیں تو ۔۔۔

ہہم اٹس اوکے زوئی آپ آگئی ہمارے لئیے کافی ھے ۔۔

ظہان ویسے آپ کی مسسز بہت کیوٹ ہیں ۔۔۔

حورا اسکی بات پر بلش کررہی تھی ۔۔۔

کیوٹ حورا بلشنگ ۔۔۔۔

اوکے میں آنٹی سے ملکر آو ۔۔۔

پھر زوئی چلی جاتی ھے

فیروزے ۔۔۔۔
بات تو سنو ۔۔۔
کیوں ۔۔۔؟؟؟
یار ناراض کس بات پہ ہوں ۔۔

میں کیوں ناراض ہوں گی اور ویسے بھی آپ میرے کیا لگتے ہیں ۔۔۔

بہت کچھ لگتا ہوں ۔۔۔

کیا ۔۔۔۔؟؟؟

کچھ نہیں

جب فیروزے فارب کی بات نہیں سنتی تو فارب اسے بازو سے پکڑ کر ایک طرف لے جاتا ھے اور پھر اسے پوچھتا ہے کہ کیا مسئلہ ھے ایسے بہیو کیوں کررہی ہو ۔۔۔

مجھے کیا مسئلہ ہے تو سنو میرا مسئلہ تم ہو دور ہٹو اب فیروزے یہ کہہ کہ پلٹنے لگتی ھے کہ فارب اسے اپنی طرف کھنچتا ھے جس سے وہ فارب کے سینے سے جا لگتی ھے اور فارب فیروزے کے دونوں ہاتھوں کو پیچھے کی طرف موڑ کر جکڑ لیتا ھے اور پھر فیروزے کے چہرے کو اپنے چہرے کے نزدیک کر کے نہایت ہی غصے سے بولتا ہے ۔۔۔۔۔۔

تمہیں پتا ھے مجھے زیادہ اٹیٹیوڈ دیکھانے والی گرلز سے چڑ ھے یہ تم ہو جسکی بکواس میں اتنی دیر سے برداشت کررہا ہوں آئیندہ اگر مجھ سے اونچی آواز میں بات کی یا میرے کسی بھی سوال کا جواب نہ دیا تو مجھ سے برا کوئی نہیں ہوگا ۔۔۔۔۔۔۔

ہونہہ تم سے برا کوئی ھے بھی نہیں اور تم بھی یہ روپ اپنی زوئی پر یا اپنی باقی گرل فرینڈز پر جھارو مجھ پر نہیں گوٹ اٹ

So leave me Mr.Farib the great……

لیکن فیروزے کو چھوڑنے کی بجائے فارب اسکے بازوں پر پکڑ سخت کرتا ھے جس سے فیروزے کی آنکھوں میں آنسو آجاتے ہیں اور فارب اسکے آنسوؤں کی پرواہ کیے بغیر اپنے ہونٹ اسکے کان کے قریب کرتا ہے اور پھر سے کہتا ھے ۔۔۔۔

تمہیں سمجھ نہیں آئی مجھسے تمیز سے بات کیا کرو اورخبردار جو آئیندہ میرا نام اس زوئی سے ملایا تو تمہاری زبان کاٹ کر چیل کووں کو کھلا دوں گا یہ کہتے ہوئے فارب کی گرم سانسیں فیروزے کو جھلسا رہی تھی کہ وہ زور سے فیروزے کے کان کی لو کو اپنے دانتوں سے کاٹتا ھے جس سے درد کی لہر فیروزے کے پورے جسم میں سرایت کر جاتی ھے پھر وہ فیروزے کو وہی چھوڑتا ہوا چلا جاتا ھے

کہ فیروزے وہی پر رونے لگ جاتی ھے جلاد تم مر کیوں نہیں جاتے کہ وہاں آیت فیروزے کو ڈھونڈتے ہوئے آتی ھے

فیروزے تم یہاں ہوں چلو اس سائیٹ پر بہت پیارا ویو ھے چلو پکس بناتے ہیں ۔۔۔

اوکے چلو

فارب دولہا دلہن کی طرف جاتاھے ۔۔۔

سس ۔۔۔
آپ بہت پیاری لگ رہی ہیں ۔۔۔
اچھا میراکیوٹ ہیرو بھی ہینڈسم لگ رہا ھے ۔۔

ہونہہ ۔۔۔
اینجل ۔۔۔۔
میری تو کبھی تعریف نہیں کی اور اس شیری کے بچے کو ہیرو کہا جا رہا ھے۔۔۔واہ کیا بات ھے

ظہان بھائی ۔۔۔
آپ خود پر کنٹرول کریں ورنہ ابھی حورا سس کو لے جاو پھر کرتے رہیں اکیلی رخصتی۔۔۔

ہاہاہاہا ۔۔۔۔
جگر ۔۔۔۔
شیری۔۔۔۔
برو آپ بھی تو دیکھیں نا ظہان بھائی جیلس ہو رہے ہیں ۔۔۔

یار شیری جب تمہیں کسی سے پیار ہوگا تب تم سمجھو گے ۔۔۔

اوکے بھائی سوری ۔۔۔
اٹس اوکے ظہان اسے گلے لگاتا ھے ۔۔۔
چلو شیری اب مجھے میری بہن کے پاس بیٹھنے دو ۔۔۔

لو ایک بھائی کیا کم تھا اب دوسرا آگیا ۔۔۔۔

ظہان ۔۔۔۔

آپ کو کیا مسئلہ ھے
حورا کو اپنے بھائیوں کے بارے میں ظہان کی بات اچھی نہیں لگتی ۔۔۔

فارب اسے آنکھ مارتا ھے
لو اب جواب دو ۔۔۔

میں جا رہا ہوں ۔۔۔۔؟،،

ظہان ۔۔۔
وہ اسکا ہاتھ پکڑتی ھے اور بس ظہان مسکرا کر دیکھتا ھے ۔۔۔

ریلیکس اینجل ۔۔۔
وہ اسے پریشان نہیں دیکھ سکتا تھا

ظہان چپ کرکے بیٹھ جاو دیکھو اگر تمہاری وجہ سے میری بہن کی آنکھوں میں آنسو آئے تو اچھا نہیں ہوگا ۔۔

یار فارب بیٹھ رہا ہوں ۔۔۔

میرا، حمنا اور فیروزے انکے پاس آتی ہیں ۔۔۔

دودھ پلائی کی رسم کے لئیے ۔۔

یار یہ آیت کہاں رہ گئی ھے ابھی تک دودھ کا گلاس نہیں لے کر آئی ۔۔۔

آیت کچن میں جا رہی تھی اسکا دوپٹا پھنستا ھے وہ گرنے والی تھی تب کسی نے اسے گرنے سے بچا لیا ۔۔۔

گرنے کے ڈر سے اس نے آنکھیں بند کی ہوئی تھی ۔۔۔
ہنی آنکھیں کھولوں ۔۔۔۔
وہ گھبرا کر بچانے والے کی طرف دیکھتی ھے جو مسکرا کر اسے تکے جا رہا تھا ۔۔۔
آیت جلدی سے اس سے دور ہوتی ھے ۔۔۔

حنان بھ۔۔۔۔

حنان کہو صرف ۔۔۔
تمہارے آل ریڈی تین بھائی ہیں

اس لئیے حنان کہو ۔۔۔

مگر آپ بھی تو فارب بھائی کی طرح ہیں مجھے کچھ سمجھ نہیں آرہا ۔۔۔۔

حنان تیرا کیا ہوگا ۔۔۔
ہنی میں صاف اور واضح لفظوں میں بتاتا ہوں ۔۔

میں تم سے پیار کرتا ہوں اور بہت جلد رشتہ بھیجوں گا اپنے آپ کو تیار رکھوں ۔۔۔۔

آپ مجھ پر حکم چلا رہے ہیں ۔۔۔

تمہیں جو سمجھنا ھے سمجھو اس سے مجھے کوئی فرق نہیں پڑتا ۔۔۔

م۔۔۔۔میں ظہان بھائی کو بتاو گی کہ آپ مجھے دھمکا رہے تھے ۔۔

حنان اسے کھنچتا ھے ۔۔۔

ہنی اگر تم نے کسی سے بھی اس بارے میں بات کی تو میں تمہیں تمہاری فیملی سے بہت دور کر دوں گا اور یہ دھمکی نہیں
I mean it

چھ ۔۔چھوڑیں مجھے ۔۔۔

ڈر کی وجہ سے وہ لرز رہی تھی

پہلے میری بات کا جواب دو وہ اسکے بازوں کو سختی سے پکڑتا ھے ۔۔

تم کسی کو نہیں بتاو گی ۔۔۔

بولو ۔۔۔۔
وہ دھاڑتا ھے ۔۔۔

اسکی چیخ نکل جاتی ھے ۔۔

میں ک۔۔۔کسی کو نہیں بتاو گی

Good that’s like my girl

وہ آیت کو وہی لرزتا چھوڑ کر چلا جاتا ھے ۔۔۔

آیت ۔۔۔۔۔
یار کہاں رہ گئی ہوں ۔۔

حورا اب سٹیج پر اکیلی بیٹھی تھی تب ہی ویٹر اسکے پاس جاتا ھے ۔۔۔۔

میم ۔۔۔۔۔
جوس

حورا جب ویٹر کو دیکھتی ھے توخوف کی وجہ سے اسکی آنکھیں کھل جاتی ہیں ۔۔

د۔۔۔دراب

حورا ڈیئر بہت یاد آرہی تھی تمہاری اسلئیے ملنے چلا آیا ۔۔۔

پلیز تم چلے جاو یہاں سے آخر کیوں میرے پیچھے پڑ گئے

دراب ہنستا ھے تب ہی ظہان کی نظر حورا کی طرف اٹھتی ھے اسے کچھ غلط ہونے کا احساس ہوتا ھے وہ جلدی سے اس طرف جاتا ھے ۔۔

حورا میں اب بھی تم سے پوچھ رہا ہوں ظہان سے طلاق لو اور میرے ساتھ چلو ابھی ۔۔۔۔

ن۔۔۔نہیں ایسا نہیں ہوسکتا ۔۔۔

ظہان حیدر شاہ وہی رک جاو وہ حورا کو اپنی طرف کھنچتا ھے اور اس کی کنپٹی پر گن رکھ دیتا ھے ۔۔۔

سب لوگ اسکی طرف دیکھ رہے تھے اور میڈیا والوں کو تو نئی سٹوری مل گئی تھی سب نے کیمرے کا رخ دراب ، حورا اور ظہان کی طرف کر دیا تھا

ظہان ابھی کے ابھی طلاق دو اسے ۔۔۔

نہیں ظہان آپ ایسا نہیں کریں گے ۔۔۔

حورا سے پیار میں نے کیا ھے یہ میرا جنون ھے ۔۔۔

ظہان اتنی سخت سیکیورٹی میں بھی یہ شخص کیسے اندر آگیا ۔۔۔

فارب اسکے ساتھ کھڑا تھا ۔۔۔

بھائی پلیز میری سس کو بچا لیں ۔۔۔

شیری نے تو باقاعدہ رونا شروع کر دیا تھا

شیری ریلیکس کچھ نہیں ہوگا ۔۔

فارب اسے تسلی دیتا ھے

ظہان سوچ رہا تھا کہ کیسے اینجل کے پاس جائے ۔۔۔

حورا کہو ظہان سے جیسے میں نے کہا ھے ویسا کرو۔۔۔۔

نہیں میں مر کر بھی ایسا نہیں کرو گی ۔۔۔

ظہان جیسے ہی قریب آتا ھے وہ اسکے بازو پر فائر کرتا ھے مگر فارب کے بروقت کھینچنے پر وہ بچ جاتا ھے

ظہان ۔۔۔۔۔
بڑی تکلیف ہورہی ھے تمہیں حورا اس وقت یہ تکلیف کہاں تھی جب تمہارا ظہان مجھ پر ظلم کر رہا تھا

دیکھو ۔۔۔
یہ حالت کر دی ھے اس نے میری دراب اپنے ہاتھ اسکے سامنے کرتا ھے ۔۔

دراب بیٹا ۔۔۔۔
ارے زوہیب صاحب آپ ۔۔

بیٹا میری بیٹی کو چھوڑ دو ۔۔

انکل اس بات کوتوآپ کو اسوقت سوچنا چاھیے تھا جب میں نے رشتہ مانگا تھا ۔۔

مگر اب بہت دیر ہوگئی ھے

اور سکندر شاہ آپ کا بہت بہت شکریہ آپ نے مجھے میرے باباجان کے پاس بھیج دیا ۔۔

یہی تو سب سے بڑی غلطی ہوئی ۔۔۔

دراب پاگلوں کی طرح ہنس رہا تھا ۔۔۔

ہاں تو ظہان حیدر شاہ کیا سوچا تم نے ۔۔۔۔

ہہم مطلب تم میری بات نہیں مانو گے تب ہی حورا اس سے خود کوچھڑاتی ھے اور ظہان کی طرف بھاگتی ھے

حورا یہ تم نے اچھا نہیں کیا تم پھر سے اسے چنا۔۔۔۔
دراب غصہ سے پاگل ہورہا تھا

اگر تم میری نہیں تو میں بھی تمہیں کسی کا نہیں رہنے دوں گا

وہ گولی چلاتا ھے ۔۔۔اور پھر
گولی سیدھی حورا کے دل کو چیرتی ہوئی نکل جاتی ھے

نہیں ۔۔۔۔

حورا ۔۔۔۔

ظہان ۔۔۔
تب ہی دراب دوسری بار گولی چلاتا ھے اور وہی حورا گرتی ھے ۔۔۔

اینجل ۔۔۔۔

ظ۔۔۔ظہان میں آپ سے بہت ذیادہ پیار کرتی ہوں ۔۔۔

بجو ۔۔۔۔
آیت اور فیروزے جو دودھ کا گلاس لے کر آرہی تھیں فیروزے کے ہاتھ سے دودھ کا گلاس نیچے گرتا ھے ۔۔

ظہان م ۔۔میں مرنا نہیں چاھتی م۔۔مجھے بچا لیں ۔۔۔۔

اینجل تمہیں کچھ نہیں ہوگا میں تمہیں کچھ بھی نہیں ہونے دوگا ۔۔۔

ظہان اسے اپنی بانہوں میں اٹھاتا ھے تب ہی اسکا ہاتھ بے جان چیز کی طرح نیچے گرتا ھے ۔۔۔

اینجل تم ایسے نہیں کر سکتی م۔۔۔مجھے چھوڑ کر نہیں
جاسکتی ۔۔۔

فارب اور سارے فیملی ان کے پاس پہنچتی ھے ۔۔۔

فارب تم سے کہا تھا نا وہ خواب سچ ہوگیا۔۔۔

دراب موقع کا فائدہ اٹھا کر وہاں سے فرار ہورہا تھا مگرمکرم اسے پکڑ لیتا ھے ۔۔۔

کیا حورا سچ میں ظہان کو چھوڑ کر چلی گئی ھے ۔۔۔؟؟؟

کیا دراب اپنے مقصد میں کامیاب ہوگیا ۔۔۔؟؟؟؟

 

–**–**–
جاری ہے
——
آپکو یہ ناول کیسا لگا؟
کمنٹس میں اپنی رائے سے ضرور آگاہ کریں۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Subscribe For Latest Novels

Signup for Novels and get notified when we publish new Novel for free!




%d bloggers like this: