The Moon Of Lunar Night Novel by Bella Bukhari – Episode 34

0
دی مون آف لونر نائیٹ از بیلا بخاری – قسط نمبر 34

–**–**–

 

آیت جیسے ہی رخصت ہوتی ھے حنان اسے گھر لے جانے کی بجائے کہیں اور لے کر جارہا تھا آیت پہلے تو پرسکون بیٹھی تھی مگر جب حمنا وغیرہ کی گاڑیاں پیچھے رہ گئی تو وہ اب سچ میں گھبرا رہی تھی

مطلب آج جو میں اتنا بول گئی اس بات کی سزا دینے کے لئیے مجھے کہیں اور لے کر جا رہے ہیں اوووو اب کیا ہوگا تب ہی گاڑی رکتی ھے اور حنان ڈرائیور کو بھیج دیتا ھے اور آیت کو اپنی باہوں میں اٹھا کر فرنٹ سیٹ پر بیٹھتا ھے یہ سب اتنا اچانک ہوتا کہ وہ بس دیکھتی رہتی ھے ۔۔۔

حنان اب خود ڈرائیونگ کررہا تھا اور آیت آگے کے بارے میں سوچ کر ہی گبھرا رہی تھی اور اسکے ہاتھ کپکپا رہے تھے اور یہ کپکپاہٹ حنان سے چھپ نا سکی وہ آیت کی حالت پر مسکرا رہا تھا

ہنی جتنا تم نے مجھے پریشان کیا نکاح کے وقت اتنا تمہیں پریشان کرنا میرا حق بنتا ھے

آیت کے ہاتھ کو انتہائی نرمی سے پکڑتے ھوئے وہ اسکے کان میں سرگوشی کرتا ھے سرپرائز کے لیئے تیار ہوجاو نا چاھتے ہوئے بھی حنان کا لہجہ وارننگ ہوگیا تھا اسکی بات سن کر وہ ڈر جاتی ھے اپنا ہاتھ چھڑا کر کلچ پر پکڑ مضبوط کرلیتی ھے آیت گھوگنٹ میں تھی اور حنان کو اسکا چہرہ ہلکا ہلکا نظر آرہا تھا

کافی لمبا سفر کرنے کے بعد وہ بلآخر بوٹ پہ پہنچتے ہیں حنان نے بوٹ کا انتظام پہلے ہی کروالیا تھا

آیت چونکہ پریشان تھی تو اسے اس لمبے سفر کے دوران نیند آگئی تھی اور حنان نے انتہائی احتیاط سے اسے اٹھایا تھا اور پھر وہ اسے لے کر بوٹ پر پہنچتا ھے اور اسے بیڈ پر سلاتاھے ھے وہ حنان کی پرسنل بوٹ تھی اوراس میں ہر چیز ہر سہولت موجود تھی جو کہ اس نے پہلے سے ہی ساری ارینجمنٹس کی ہوئی تھیں ۔۔۔

وہ بوٹ سے باہر جاتا ھے جہاں پر اسکا خاص ملازم موجود تھااور اسکے حکم کامنتظر تھا حنان اسے بوٹ چلانے کا کہتا ھے اور خود اپنی ہنی کے پاس جاتا ہے جہاں وہ دنیا جہاں سے بےخبر مزے سے سو رہی تھی ۔۔

حنان کتنی دیر اسے دیکھتا رہتا ھے پھر وہ دل کے ہاتھوں مجبور ہوکر اسکے قریب بہت قریب ہوتا ھے جس سے اسکی سانسوں کی گرماہٹ آیت کے چہرے پر پڑ رہی تھی وہ پہلے آیت کی بندیا اتارتا ھے اوراسکے ماتھے پر کس کرتا ھے پھر اسکی آنکھوں پر مگر اسکی پیاس بڑھتی جارہی تھی پھر وہ اسکے دونوں گال پر کس کرتا ھے اور آیت اسکی قربت کی وجہ سے آنکھیں کھولتی ھے تو حنان دیوانہ وار اسکے چہرے پر اپنا لمس چھوڑ رہا تھا اور اسکی قربت میں آیت کا تو برا حال ہورہا تھا وہ کتنی دیر اس حالت میں رہتا ھے آیت کو اب سانس نہیں آرہی تھی مگر حنان کو کوئی ہوش نہیں تھا وہ تو بس خود کو سیراب کر رہا تھا وہ اسے ہٹانے کی کوشش کرتی ھے اور ناجانے کتنی دیر وہ اسے پیار کرتا مگر جب آیت سے برداشت نہیں ہوتا تو وہ آنسو بہانا شروع کردیتی ھے حنان کو پھر ہوش آتا ھے تو وہ اسے دور ہوتا ھے مگر آیت پر ابھی بھی جھکا ہوا تھا۔۔۔

وہ گہرے گہرے سانس لے رہی تھی

ہنی۔۔۔۔۔
آر یو آلرائٹ ۔۔۔

وہ آنکھیں بند کرکے بس رو رہی تھی
ہنی ۔۔۔۔۔
وہ اسکے ہاتھوں کو آزاد کرتا ھے آیت اٹھتی ھے اور اسے خود سے دور کرتی ھے ۔۔۔

ی۔۔۔یہ کیا کر رہے تھے آپ
وہ بیڈ سے اٹھتے ہوئے کہتی ھے
آپ تو نفرت کرتے ہیں نا مجھ سے تو پھر یہ یہ سب کیا تھا

ہنی ۔۔۔۔

اوووو اب سمجھ آیا آپ ایسے میرے قریب آکر بدلہ لے رہیں ہیں ویسے نفرت کے اظہار کا بہترین طریقہ ڈھونڈا ھے آپ نے ۔۔۔

میری بات تو سنو ہنی وہ آیت کو اپنے قریب کرتا ھے

جیسا تم سوچ رہی ہوں ویسا کچھ نہیں ہنی ادھر دیکھو میری آنکھوں میں آیت اسکی آنکھوں میں دیکھتی ھے کیا تمہیں نفرت نظر آرہی ھے …

Honey
I love you soooòooòo much
Plz
Believe me
You are my love forever love
I love you till the end of my life……
Honey look at me …..

آیت کو اسکی آنکھوں میں اپنے لئیے محبت اور دیوانگی نظر آرہی تھی

مجھے معاف کردو میں نے تمہیں بہت تکلیف دی وہ اسے گلے لگاتا ھے آیت بہت ذیادہ روتی ھے اسکے آنسو حنان کو تکلیف پہنچا رہے تھے ۔۔۔

پلیز رونا بند کرو یہ کہنے کی دیر تھی کہ آیت کے رونےمیں اضافہ ہوجاتا ھے ۔۔۔

ہنی ۔۔۔
وہ اسکے آنسو پونچھتا ھے اور آیت آنکھیں بند کرکے اسکے لمس کو محسوس کررہی تھی ۔۔

ہنی تم نے مجھے معاف کردیا وہ آنکھیں کھولتی ھے اور مسکرا کر اسکی طرف دیکھتی ھے وہ مزید حنان کو تکلیف میں نہیں دیکھ سکتی تھی اس لئیے اسکی الجھن ختم کر دیتی ھے اور مسکرا کر بولتی ھے ۔۔۔

“میں آپ سے ناراض نہیں تھی بس تھوڑا سا غصہ تھا جو اب ختم ہوگیا ھے اس لئیے آپ کو معافی مانگنے کی ضرورت نہیں ھے ۔”

“ہنی میں خوش نصیب ہوں کہ مجھے تم ملی اور میں
اللہ تعالی کا شکر ادا کرتا ہوں کہ تمہیں میرے نصیب میں لکھ دیا ۔۔۔۔”

I m blessed my love
I’m blessed my heart
I’m blessed my soulmate

چلو تم جلدی سے فریش ہوجاو پھر ایک سرپرائز ھے تمہارے لیے ۔۔۔

حنان میں بہت تھک گئی کیا بعد میں سرپرائز دیکھ سکتی ہوں پلیز ۔۔۔۔

نو ۔۔۔
بس تھوڑی دیر لگے گی جاو فریش ہوکر آو ۔۔۔

پھر وہ جیسے ہی فریش ہوکر آتی ھے تو حنان کے گفٹ کیے گئے مہرون گاون میں بے انتہا خوبصورت لگ رہی تھی حنان تو بس اسے دیکھتا رہتا ھے اور وہ اسکی نگاہوں سے پزل ہورہی تھی ۔۔۔

جیسے جیسے وہ اسکے قریب آرہا تھا آیت کے دل کی دھڑکن تیز ہوتی جارہی تھی حنان اسے خوبصورت سا ڈائمنڈ کا لاکٹ پہناتا ھے جس پر ان دونوں کا نام انتہائی خوبصورتی سے لکھا گیا تھا ۔۔۔

It’s Beautiful 😍

مگر میری ہنی سے ذیادہ پیارا نہیں ھے وہ اسکا ہاتھ تھام کر بوٹ کے باہر لے جاتا ھے اور آیت تو وہ منظر دیکھ کر مسمرائز ہوجاتی ھے کیونکہ پوری بوٹ کو روزز اور بیلونز سے سجایا گیا تھا جس میں سوری لکھا ہوا تھا ۔۔۔

Hnaan its unique and wonderful i just love it.

آپ کو کس نے بتایا مجھے سمندر بہت بہت ذیادہ پسند ھے

آیت خوشی سے اسکے گلے ملتی ھے اور اسکے گال پر کس کرتی ھے ان بیلونز کے پاس جاتی ھے

حنان اسے خوش دیکھ کر خوش ہورہا تھا۔ ۔

حنان اسے باہوں میں اٹھاتا ھے اور اسکی نگاہوں کو پڑھ کر آیت کا چہرہ سرخ ہوجاتا ھے…….

حنان ۔۔۔۔

ابھی وہ کچھ کہتی کہ حنان اسے پہلے خود بولتا ہے

ہنی میں جانتا ہوں ابھی تم نے پڑھنا ھے تو تمہیں پریشان ہونے کی ضرورت نہیں ہے ۔۔۔۔

اور حنان کا یہ کہنا تھا کہ آیت تشکر بھری نگاہوں سے حنان کو دیکھتی ھے اور ہیپلی اسےہگ کرتی ھے
اور پھر خوبصورت رات کا اختتام ہوتا ھے ۔۔۔

ظہان اپنی اینجل کے پاس واپس جارہا تھا وہ آج صرف اور صرف آیت اور خاص طور پر شیری کے لیئے آیا تھا کیونکہ جب سے فارب نے اسے اسکی حالت کے بارے میں بتایا تھا وہ پریشان ہوگیا تھا اور اب وہ شیری کو اپنے ساتھ لے کر جارہا تھا ۔۔۔۔

فارب باقی سب کا بہت خیال رکھنا تمہاری شادی لیٹ نہیں ہونے دوں گا اینجل بہت جلد ٹھیک ہوجائے گی اور ہم جلد ہی واپس آجائیں گے ۔۔۔

جگر مجھے بھی اپنی بہن سے ملنا ھے تو تم جلدی واپس آنے کی کوشش کرو۔۔۔۔

شیری بھی تب تک آجاتا ھے ظہان بھائی چلیں شیری تو ایسے خوش تھا جیسے اسے کوئی خزانہ مل گیا ہو وہ جلدی سے گاڑی میں بیٹھتا ھے اور فارب اور ظہان اسکی جلدبازی پر مسکراتے ہیں ۔۔۔

شیری یار اتنی بھی کیا جلدی ھے کم از کم مل تو لے ۔۔۔

فارب برو مل تو لیا ھے مجھے جلد از جلد حورا سس کے پاس پہنچنا ھے اوکے بائے ۔۔۔

چلیں ظہان بھائی ۔۔۔۔

Hahaha……

ok ..

–**–**–
جاری ہے
——
آپکو یہ ناول کیسا لگا؟
کمنٹس میں اپنی رائے سے ضرور آگاہ کریں۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Subscribe For Latest Novels

Signup for Novels and get notified when we publish new Novel for free!




%d bloggers like this: