The Moon Of Lunar Night Novel by Bella Bukhari – Episode 4

0
دی مون آف لونر نائیٹ از بیلا بخاری – قسط نمبر 4

–**–**–

 

فیروزے تم ابھی تک تیار نہیں ہوئی ۔ جلدی سے ریڈی ہو اور حورا کہ پاس جاو اسے بھی جلدی تیار ہونے کا کہو ۔ممی وہ تو ٹھیک ھے پر میں کونسا ڈریس پہنو مجھے کچھ سمجھ نہیں آرہا ۔ آپ بتائیں کوئی ہیلپ کردیں میری ممی ۔

بیٹے کچھ بھی پہن لو میرے بچے کے ایک سے بڑھ کے ایک کپڑے تو ہیں ۔یہ کہتے ہوئے جیسے ہی رخسانہ بیگم فیروزے کے کمرے میں انٹر ہوتی ہیں تو حیرت سے پہلے پورے روم کو پھر فیروزے کو دیکھتیں ہیں کیوں کہ پورے روم میں اسکے کپڑے پھیلے ہوئے تھے پورا بیڈ، صوفہ پر یہاں تک پوری کبرڈ خالی ہوئی پری تھی ۔

اف بیوقوف لڑکی پورے کمرے کا حشر نشر کردیا پتہ نہیں میڈ بیچاری کیسے تمہارے روم کو صاف کرتی ھے کوئی بھی اچھا سا ڈریس پہن لیتی پتہ نہیں کب اس بےوقوف کو عقل آئی گی ۔۔

اف ہو ممی ایک تو میں پرابلم میں ہوں دوسرا آپ کی قوالیاں رخسانہ بیگم کہ آنکھیں دکھانے پر وہ تھوڑی گڑبڑا کہ پھر کہتی ھے کہ آئ مین لیکچر شروع ہو گئی ایک میری ہیلپ کرنے کی بجائے مجھے ہی ڈانٹ رہی ہیں ۔

اس لڑکی کا تو اللہ ہی حافظ ھے _____اچھا سنو یہ ڈرامےبازیاں بند کرو اور جلدی سے ریڈی ہو اور حورا کہ پاس جاو ۔
اوکے
اوکے موم میں جلدی ریڈی ہو کہ بجو کہ پاس جاتی ہوں ۔۔۔۔۔۔۔۔
اچھا سنو حورا کچھ بتایا تو نہی تم نے ؟
ارے نہیں ممی میں نے بجو کو کچھ نہیں بتایا حالانکہ آپ جانتی ہیں میں کوئی بھی بات کو سیکریٹ رکھ ہی نہیں سکتی بس بجو کی خوشی اور سرپرائز کیلئے خود پر جبر کیا ھے آہ یہ میں ہی جانتی ہوں ۔

بس بس فیروزے زیادہ ڈرامے مت کرو کوئی بھی بہانہ بنا لینا اور جلدی کرو تمہارےپاپا آنے والے ہیں اور تم باتوں میں ٹائم ویسٹ کر رہی ہو ۔۔۔۔۔

Ok mum……..

فیروزے جیسے ہی ریڈی ہو کہ حورا کو بلانے جاتی ھے اور جیسے ہی حورا کو بلاتی ھے اسکے باقی کے الفاظ اسکے منہ میں ہی رہ جاتے ہیں کیوں کہ معصوم سی حورا ، سفید رنگ کہ لونگ فراک میں بے انتہا خوبصورت لگ رہی ہوتی ہے ۔

سوری آپکون میرے بجو کہاں ہیں؟
فیروزےےےےےےے
کیوں کیا میں اچھی نہیں لگ رہی ۔۔۔۔
ہاہاہاہاہاہا بجو فیروزے کو حورا کے کیوٹ سے فیس کو دیکھ ہنسی آجاتی ھے
ہاہاہاہاہاہا ۔۔۔۔۔
نن نہیں آپ تو بے انتہا خوبصورت لگ رہی ہیں ایک دم وائٹ فیری ۔۔۔

Wait wait bajo …

آپ کہاں جارہی ھیں جبکہ میں نے تو اپکو سرپرائز کہ بارے میں کچھ نہیں بتایا ¿
ہاہاہاہاہاہا فیروزے
ہاہاہاہاہاہا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دیکھا پاپا نے مجھے انفارم کردیا تھا اور دیکھو تم مجھے سرپرائز دینے آئی اور خود سرپرائز ہوگئی ہاہاہاہا ۔۔۔۔
بجو ووووووووووووو
جائیں میں نے آپسے اور پاپا دونوں سے کوئی بات نہیں کرنی آپ دونوں بہت برے ہو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

اور کچھ دیر میں ہارن کی آواز اتی ھے تو رخسانہ بیگم اپنی دونوں بیٹیوں کو بلانے آتی ہیں تو فیروزے اپنی ممی کو سب بتا دیتی ہے تو رخسانہ بیگم خفا ہونے کی ایکٹنگ کرتی ہیں ورنہ فیروزے زیادہ ناراض ہوجاتی ۔
پھر سب گاڑی میں بیٹھتے ہیں راستے میں خاموشی کو محسوس کرتے ہوئے زوہیب صاحب پوچھتے ہیں کہ کیاہوا سب خاموش کیوں ہیں ¿
تو رخسانہ بیگم کہتی ہیں میں اور فیروزے آپ سے ناراض ہیں ۔تو زوہیب صاحب اچھا ااااآ کو زرا لمبا کھینچتےہیں ۔۔۔۔۔
تو فیروزے اور ناراض ہوجاتی ھے ۔۔۔۔۔۔۔۔ تو زوہیب صاحب ہار ماننے والے انداز میں کہتے ہیں کہ فیروزے آپ جو سزا دیں ہمیں منظور ھے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
اب خوش پاپا کی جان!
اممممممممممم
تھوڑا سوچنے دیں 🤔
اوکے ڈن ۔
تو ایسا کریں آج کا مینیو میں ڈیسائڈ کرو گی اور آپ بجو مجھے اپنے ہاتھ کا بیک کیا ہوا کیک بنا کہ دیں گی اور
بسسسسسسس فیروزے ابھی اتنا کافی ھے ۔۔۔۔
اوکے بجو میں تھوڑی سی راضی ہوگئی
لیکن میں آپ دونوں کو ابھی معاف نہیں کیا _______

اوکے میری جان میں منا لو گا اپنی پرنسز کو ۔

K papa

اور پھر یہ خوبصورت سی فیملی لاہور کے سب سے مہنگے لگثری ریسٹورینٹ

“Cosa Nostra La Tavola”

میں انٹرہوتے ہیں اور پھر کچھ ہی دیر میں ویٹر آرڈر لینے اتا ھے تو فیروزے کافی ساری اپنی فیورٹ ڈیشز آرڈر کرتی ھے جن میں سے کچھ تو فیروزے اور اسکے پاپا کو پسند نہیں ہوتی ۔

تو وہ بیچارے سینٹی سی شکل بناتے ہیں جسے دیکھ کہ فیروزے ہنستی ہی چلی جاتی ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

اور شور کی وجہ سے کسی کی غصے بھڑی نظر اٹھتی ھے اور پھر سامنے کا منظر دیکھ کر

غصہ دلچسبی میں بدل جاتا ہے

“پھر اسکے بعد نگاہوں میں بس گیا وہ شخص ،
اگرچہ ہم نے اسے بے دلی سے دیکھا تھا ”

کیونکہ وہ حسین، چنچل، شوخ سی لڑکی ہنستے ہوئے لگ ہی اتنی پیاری رہی تھی وہ شخص یہ تک بھول گیا کہ وہ اپنی امپورٹنٹ کلائنٹ سے میٹنگ کرنے آیا ہوا ھے ‘ وہ بھول جاتا ہے کہ وہ کیا کرنے آیا ہوا تھا ‘ کیوں آیا اسے کسی چیز کا کوئی حوش نہی ہوتا ‘ کیونکہ وہ جو بلیو ڈریس میں کئی حسین پریوں کو بھی پیچھے چھوڑ گئی ‘ اسکی ہیزل برائون آئیز جو کسی کو بھی اپنی آنکھوں کہ سحر میں قید کر لے ‘ اسکی چھوٹی پر کیوٹ سی ناک جو کہ اچھی خاصی مغرور لگ رہی تھی ‘ پھر اسکے گلاب کہ جیسے ہونٹ ‘ ہنستے ہوئے اتنا خوبصورت لگ رہے تھے کہ وہ خود کو اس حسین پری پیکر کو دیکھنے سے روک نہ پایا ^^^^^^^^^^^^ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ کہ
اچانک فیروزے کو محسوس ہوتا ھے جیسے کوئی مسلسل اسے دیکھ رہا ہے تب ہی وہ ادھر ادھر نگاہیں دوراتی ھے مگر اسے کچھ نہیں دیکھتا تو وہ اگنور کرکے کھانا شروع کرتی ھے ۔۔۔۔۔

دوسری طرف مخالف ٹیبل پہ بیٹھا وہ شخص بڑی مشکل سے خود کو اس پری کہ سحر سے باہر نکالتا ھے اور پھر سے اپنی میٹنگ میں بزی ہوجاتا ھے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

فیروزے کھانا کھاتے ہوئے حورا سے بات کررہی ہوتی ھے کہ اچانک فیروزے کہ ڈریس پر جوس گر جاتا ھے تو وہ واشروم کی طرف جاتی ھے تاکہ اپنا ڈریس صاف کرسکے وہ جیسے ہی واشروم میں جاتی تو شاید کوئی پہلے سے وہاں موجود ہوتا ہے ‘ وہ فیروزے کو اچانک سے اپنی طرف کھنچتا ھے اور واشروم کا ڈور لاک کردیتا ھے ‘
ادھر فیروزے کی چیخ نکلتی تو اسکے بھاری ہاتھ نے اسکی چیخ کا گلا گھونٹ دیا ۔۔۔۔۔ تو فیروزے خوف کی وجہ سے ہلکی ہلکی کانپنے لگتی ھے اورساتھ ساتھ اس شخص کے فولادی ہاتھ کو ہٹانے کی کوشش کرتی ھے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ پر اسے تو جیسے کوئی پرواہ ہی نہ تھی ‘ جب فیروزے اپنے نازک ہاتھوں سے اسکے بھاری ہاتھوں پہ اپنے لمبے نیلز مارتی ھے جسکی وجہ سے اسکے ہاتھوں پہ اچھی خاصی خراشیں آتی ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تو اس شخص نے جو پہلے ہی فیروزے کو پیچھے سے جکڑا ہوا تھا پھر اسکے دونوں ہاتھوں کو کمر کہ پیچھے لا کے اسے مکمل طور پر قید کر لیا ۔۔۔۔۔۔۔ اور پھر وہ انتہائی سکون سے فیروزے کو محسوس کرتا رہتا ھے ۔۔۔۔۔۔

اور اسطرح تقریبا“ دس منٹ تک وہ اسے محسوس کرتا رہتا ھے ۔۔۔۔ اور فیروزے بیچاری ہلنے کی کوشش کرتی ھے لیکن وہ ایسا کر ہی نہیں سکتی کیونکہ ساتھ موجود شخص کی پکڑ اتنی سخت ہوتی ہے کہ تکلیف کی شدت سے اسکی آنکھیں بھیگنے لگتی ہیں ____________

مگر وہ بے پرواہ انسان ان لمحوں میں مدہوش ہوتا ھے ۔۔

Shhhhhhhhhhhhhhh don’t move…….. little fairy

فیروزے ڈر کے مارے خاموش کھڑی رہتی ہے اسے کئی لمحوں تک اس سخص کی گرم سانسیں اپنی گردن پہ محسوس ہو رہی ہوتی ہیں ۔۔۔۔۔۔اور کتنے ہی پل ایسے گزر جاتے ہیں “””””””””””””
پھر وہ اپنے ہونٹوں سے فیروزے کے کان کی لو کو چومتا ھے اور ہلکا سا اپنے دانتوں سے کاٹتا ھے ‘ ڈر کی لہر فیروزے کے پورے جسم میں سرایت کر جاتی ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اور پھر وہ سرگوشی میں اسکے کان میں کچھ کہتا ھے ۔۔۔۔۔

Kizlarim
[ my girl ]

Now close your eyes ‘
Kizlarim ‘
Close your beautiful eyes.

اپنی آنکھیں بند کرو ۔۔۔۔۔۔ جیسے ہی فیروزے ڈر کی وجہ سے اپنی آنکھیں بند کرتی ھے تو وہ ہلکے سے اسکے گال پر بوسہ دے کہ کسی جن کی طرح جیسے آیا تھا ویسے ہی غائب ہوجاتا ھے °°°°°°°°°°°

اور فیروزے بے بس سی ادھر ادھر اس شخص کو تلاشتی ھے مگر اسے کوئی بھی نظر نہیں آتا ۔ کچھ دیر بعد وہ خود کو نارمل کرتی ھے اورسوچتی ھے کہ آخر کون تھا یہ شخص کیوں آیا تھا پر اسے کوئی جواب نہیں ملتا اور وہ واپس ٹیبل کی طرف جاتی ھے ۔۔۔۔۔۔ اسطرح ڈنر کے بعد زوہیب صاحب فیروزے کو آئسکریم کھانے کا کہتے ہیں تو وہ کوئی جواب نہیں دیتی زوہیب صاحب حیران ہوکے پیچھے کی طرف دیکھتے ہیں تو فیروزے خاموش پریشان سی بیٹھی ہوتی ہے تو وہ تھوڑا پریشان ہوکے پوچھتے ہیں کہ پرنسز کیا ہوا ابھی تک ناراض ہو پاپا سے ‘ تو فیروزے اپنے خیالوں سے واپس آتی ھے اور پوچھتی ھے ج جی پاپا آپ نے کچھ کہا؟

پھر زوہیب صاحب کہتے ہیں کہ میری جان ناراض ہو ۔۔۔ تو فیروزے کہتی ھے نہ نہیں پایا بس سر میں درد ھے آپ بس گھر چلیں میں تھک گئی ہوں تھوڑا ریسٹ کر لوں تو ٹھیک ہو جاو گی ۔۔۔۔
تو زوہیب صاحب کوئی سوال نہیں کرتے اور سب گھر پہنچ جاتے ہیں تو فیروزے فورا“ اپنے روم میں چلی جاتی ھے ۔

اور پھر روم لاک کرنے کہ بعد وہ جو کب سے ضبط کیے ہوئے آنسو کو نہیں روک سکتی نہ جانے کتنی دیر تک وہ روتی رہتی ہے کیونکہ وہ تھی ہی ایسی سینسٹیو چھوٹی سی چھوٹی بات پہ ڈر جاتی اسلیئے گھر والے زیادہ اکیلا نہیں رہنے دیتے تھے ۔ لیکن یہ تو کچھ نیا ہوا تھا اسکے ساتھ کہ اچانک سے کوئی اجنبی آیا اور اسے خوفزدہ کرگیا اور وہ کسی سے شئیر بھی نہیں کرسکتی تھی ۔پھر بہت دیر بعد سنبھل جاتی اور سوچنے لگتی ھے کہ آخر وہ کون تھا پاگل، ڈفر، چیپسٹر، گدھا، بندر ۔۔۔۔۔۔ پتا نہیں کیا چاہتا تھا ۔۔۔۔۔۔۔ ۔۔۔۔۔۔۔ خیر مجھے کیا مر جائے مونسٹر کہیں کا ۔

●●●●

ادھر احسن صاحب بیزنیس ٹور پہ گئے ہوتے ہیں ۔اور آیت شیری گھر پر اکیلے ہوتے ہیں ۔ تو وہ دونوں بہن بھائی اپنے جان سے پیارے بھائی کو کال کرتے ہیں ۔
ہیلو سلام علیکم بھائی _
کیسے ہیں آپ _
آپکو تو ہماری یاد بھی نہیں آتی ہر وقت بزی رہتے ہیں کبھی ترکی جارہے ہیں تو کبھی نیویارک کبھی پیرس تو کبھی اٹلی آپ تو اپنی فیشن انڈسٹری میں اتنا بزی ہوتے ہیں کہ آپ کو شاید ہی یاد ہو کہ کوئی آیت، اور شیری بھی ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ آیتنان سٹاپ بولے جاتی ھے

Hold on
Hold on my prinxes ‘ take some breath my cutie ‘ cool down my sis my lovely one.

Why ۔۔۔۔۔۔۔۔why i can’t take breath u never know how much we miss you ‘ how much we need you.

PRINXES plzzz listen to me;

No you listen to me i………..

What the hell sherry

مجھے سیل دو ۔ آیت مجھے بھی بیگ بی سے بات کرنی ھے اب چپ کر جاو ۔
ہیلو بیگ بی ہاو آر یو؟

I’m fine sherry & what about you my champ…..

میں بھی ٹھیک اینڈ آپ کب آو گے ہم اپکو بہت مس کررہے ہیں ۔
میں بس پہنچ گیا اور پھر فارب گھر آجاتا ھے تو آیت اور شیری دونوں شوک ہو جاتے ہیں ۔
بروووو بیگ بی یییییی آیت اور شیری دونوں یک وقت کہتے ہیں اور فارب کے گلے لگ جاتے ہیں ۔

I’m sorry to both of you
I miss you alot _____

نہیں بھائی آپ سوری نہ بولیں ہم تو بس مس کرہے تھوڑا مما کو تو فارب دونوں کو لے کےصوفے پہ بیٹھتا ھے کیونکہ دونوں نہایت حساس بچے ہوتے ہیں خاص طور پہ آیت مما کی ڈیتھ کے بعد وہ فارب کے زیادہ کلوز ہوجاتی ھے ۔
اب ٹھیک ھے میری پرنسز ¿

Yes Bro now I’m good.

میں ہوں نہ تم دونوں پریشان مت ہوا کرو

You kow what when you both are upset then mama is also upset due to both of you. So smile

تو آیت اور شیری دونوں سمائل کرتے ہیں ۔
اچھا اب جلدی سے دونوں ریڈی ہو ہم ڈنر کرتے ہیں پھر لانگ ڈرائیو پہ جائیں گے اور آئت کی فیورٹ آئسکریم بھی کھائیں گے ۔
رئیلی برو یو آر سو سوئٹ آئی لو یوووووووووووو 😘😘😘

Love you too.

برو یہاں میں بھی ہوں ۔۔۔۔۔ شیری کی ناراض آواز آتی ہے ۔فارب اور آیت کی ہنسی نکل جاتی ہے ۔ارے ہاں آیت ہم تو اسے بھول گئے ہیں ۔ بروووووووو آپ ایسے ہی کرتے ہیں ۔جب بھی آیت اپکے ساتھ ہوتی ھے آپ مجھے اگنور کردیتے ہو ۔
شیری مائی چیمپئن میں تمہارے ساتھ تمہاری فیورٹ گیم کھیلو گا نہ اب خوش ۔
پرامس برو یو پلے ود می ¿
پرامس ۔
اور اسطرح خوشگوار رات کا اختتام ہوتا ہے ۔

 

–**–**–
جاری ہے
——
آپکو یہ ناول کیسا لگا؟
کمنٹس میں اپنی رائے سے ضرور آگاہ کریں۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Subscribe For Latest Novels

Signup for Novels and get notified when we publish new Novel for free!




%d bloggers like this: