Tum Main aur yah Rasta Novel by Hashmi Hashmi – Episode 21

0
تم میں اور یہ راستہ از ہاشمی ہاشمی – قسط نمبر 21

–**–**–

احان نے اس لڑکی کو اپنے سامنے کیا اس کے منہ سے خون نکل رہا تھا چچچ بس یہ ہی تمہاری محبت تھی اتنا ہی برداشت تھا تم میں احان نے بہت نرمی سے اس کا خون صاف کیا اور پھر بولا تم تین دن سے پاکستان میں ہو اور ان تین دنوں میں تم نے مجھے بہت ٹارچر کیا ہے اگر میں تم سے ملنے نہیں آیا تو تم حور کو مجھے سے بدگمان کر دو گئی

لیکن ایک بات میں تمہیں بتانا چاھتا ہوں میری بیوی مجھے پر بہت بھروسہ کرتی ہے پتہ میری زندگی کی سب سے بڑی غلطی ماسی کی بات مان کر تم سے دوستی کرنا تھی تم جیسی گھٹیا لڑکی میں نے آج تک اپنی زندگی میں نہیں دیکھی

جو میرے پیسوں کی وجہ سے مجھے سے محبت کرتی ہے اس جس کی شہ پر تم یہ سب کر رہی ہو اس کو میں چھوڑ گا نہیں اور یہ ٹھپر میں نے تمہیں اس لیے مار ہے کل رات تمہاری کال کی وجہ سے میری حور کی نیند خراب ہوئی تھی تو سوچوں اگر تمہاری وجہ سے میری حور مجھے سے دور ہوئی یا وہ ہڑٹ ہوئی تو میں تمہارا حال کرو گا میں نہیں جانتا احان نے کہا اور اپنے فون سے ایک کال کی جبکہ وہ لڑکی شاک میں تھی اس کو سب اپنے ھاتھ سے نکلتا دیکھ دے رہا تھا

حانوں میں تم سے بہت محبت کرتی ہو میں تمہیں بغیر مر جاو گئی اس نے جلدی سے کہا تو. مر جاو مجھے فراق نہیں پڑھتا احان نے کہا اتنے میں کمرا کا درواذہ کھولا اور پولیس اندر ائی

یہ سب کیا ہے احان اس نے ڈردتے ہوے پوچھا ڈئیر کزن میں نے تمہیں ڈی پوٹ کروا دیا ہے اب تم کبھی پاکستان نہیں اسکتی احان نے مسکراتے ہوے کہا
احان پلیز میری بات سنوں احان لیکن احان وہاں سے جاچکا تھا
🔥🔥🔥

حور سڑک پر چل رہی تھی احان کے. الفاظ اس کے آس. پاس گھوم رہے تھے
میں نے انکل کے کہنے پر اس سے شادی کی،،،،،
میں آج بھی حور سے محبت نہیں کر پایا ،،،،،،،
میں لندن کے وہ دن نہیں بھولا ،،،
یہ روم مسز احان کے نام سے بک ہے ،،،،
میں تمہارے بغیر نامکمل ہو حور ،،،،
میں تم سے بہت محبت کرتا ہوں،،،،
تم میری زندگی میری چندا ہو،،،،
میری گرل فرینڈ کا فون تھا،،،،
اگر میں نے کبھی تم سے بے وفائی کی تو ،،،،
حور بے دماغ سے چلی سڑک کے درمیان ائی کہ اچانک ایک تیز رفتا کار اس کو الگئی حور کی آنکھوں کے سامنے ایک سایہ ایا تھا اور. ہونٹوں سے یہ الفاظ ادا ہوے
جس دن احان اپنی حور سے بے وفائی کرے گا اس دن حور کا اس دنیا میں. آخری دن ہو گا ،،،،،
پھر حور کی آنکھیں بند ہو گئی تمام تکلیف ختم تمام شکوہ دم توڑا گئے احان کی حور شائد آج مر گئی
💔
چھوڑ دے چھوڑ دے آج ہاتھ
روک لے روک لے آنکھوں میں جزبات
ہے شروع آج سے جدائی کی رات
لے کر جارہی ہو تیری یاد ساتھ
تیری آغوش سے دور تیری خوشبوں
سے دور مجھے ہو جانے دے آج
خود سے تو دور ڈھونڈ لوگئی کوئی
ایسی جگہ نہ جہاں ہو تیری یاد
سے رابطہ راستوں سے جڑے
نہ کوئی راستہ
فاصلوں سے بھی مٹہ نہ سکے فاصلہ
ان رابطوں سے دور تیرے راستوں
سے دور مجھے ہو جانے دے آج خود
سے تو دور 🔥

عمران جو وہاں سڑک پر موجود تھا بھاگ کر اس لڑکی کے پاس ایا کیونکہ اس نے ابھی تک اس لڑکی کی شکل نہیں دیکھی تھی اس نے حور کو سیدھا کیا کیونکہ وہ منہ کے بل گرئی تھی میںم حور عمران زیر لب بولا اس کو آج بھی یاد تھا وہ دن جب احان نے اس کو اور عروج کو نوکری سے فارغ کیا تھا اور جاتے ہوے احان نے اس سے کہا آئیدہ اگر کیسی لڑکی کے کریکڑ کے بارے میں بات کرو تو یہ سوچ لینا کہ تمہاری بھی بہنے ہے گھر پر اور میں نے سنا ہے بھائیوں کا کیا بہنوں کے سامنے آتا ہے اس کی بات پر عمران کو لگا اب سانس نہیں ائے گا شرمندہ تو وہ پہلے بھی تھا اب اس نے دل سے توبہ کر لی

💖💖💖

احان آفیس ایا تو میٹنگ ختم ہو چوکی تھی اس کی غیر موجوگی میں ریحان یہ سب دیکھتا تھا احان اپنے روم میں ایا بہت دیر تک وہ ریحان کا انتظارا کرتا رہا لیکن وہ نہیں آیا تو احان نے انٹر کام اٹھیا میرے روم میں آوں احان نے کہا اور ریسور واپس رکھا

کچھ دیر بعد درواذہ نوک ہوا اور ریحان اندر ایا باس یہ فائیل ایک بار دیکھ لو پھر مجھے بتا دینا اگر کوئی کمی ہے تو ریحان نے آنکھیں چڑاتے ہوئے کہا احان بہت غور سے اس کو دیکھا رہا تھا جو ضبط کی آخری حد پر تھا

ریحان بیٹھوں احان نے کہا احان کی اپنی آواز میں بے بسی تھی اتنے سالوں کی دوستی میں. پہلی بار ایسا ہوا تھا کہ دونوں اپنی اپنی جگہ بے بس تھے ریحان کرسی کھیچ کر بیٹھ گیا اور زمیں کو دیکھنے لگا جیسے کچھ تلاش کر رہ ہو میری طرف دیکھ ریحان احان نے کہا لیکن ریحان نے اس کی بات سنی ہی نہیں تو احان اپنی کرسی سے اٹھ کر اس کے پاس ایا اور اس کے کندھے پر ہاتھ. رکھا ریحان تو کیوں شرمندہ ہے جو کچھ ہوا اس میں تیری کوئی غلطی نہیں تھی سوری یار کل غصہ میں میں کچھ زیادہ ہی بول گیا احان نے کہا اور ریحان نے اس کی طرف دیکھا

ساری غلطی ہی میری ہے بھابھی میرے گھر ائی تھی میری بیوی کی ماں ان سے وہ سب کہا بھابھی حور میرے لیے میری بہن ہی نہیں بلکہ میری ماں کی جگہ ہے اور میری بھابھی میری بہن اور ماں کے بارے میں کوئی ایسی بات کیسے کر سکتا ہے ریحان نے غصہ سے ٹیبل پر ہاتھ مارا یار وہ تیرے اپنے ہے تیرے غصہ کو دیکھ کر مجھے ایسا کیوں لگ رہا ہے کہ تو نے رابعہ بھابھی پر بھی غصہ کیا ہوا گا کمینہ انسان اس کی حالت کو دیکھا لیتا اور بہتری ایسی میں ہے کہ کچھ عرصہ حور رابعہ بھابھی سے نہ ملے احان نے کہا

اس کی بات پر ریحان تڑپ گیا کیا کہا سالے تو نے وہ میرے اپنے ہے اور تو تجھے پتہ ہے نہ تو میری زندگی میں کیا اگر تو نے اب ایسی کوئی بات کی یا مجھے سے کوئی راشتہ کوئی تعلق توڑا تو میں ایک منٹ میں رابی کو چھوڑ دو گا تیرا دماغ خراب ہو گیا ہے ریحان اس سب میں بھابھی کی کیا غلطی یار اور تو اور یہ تیرے بچے کہ ساتھ بھی نا انصافی ہو گئی جو اس دنیا میں ابھی تک ایا نہیں ہے احان نے کہا

رابی کی غلطی ہے اس نے کیوں نہیں روکا اپنی ماں کو اور مجھے فرق نہیں پڑھتا یہ راشتہ رھے یا نہ رھے لیکن ان دونوں ماں بیٹی کی وجہ سے تیری میری دوستی ٹوٹی تو یہ سب کے لیے اچھا نہیں ہو گا ریحان نے کہا اس کی بات سن کر احان نے گہرا سانس لیا بے شک وہ ایک اچھا دوست تھا جو دوستی بچانے کے لیے کچھ بھی کر سکتا تھا

احان نے اگے بڑھ کر اس کے لگے سے لگا دونوں کی آنکھیں نمی تھی بس میری جان میرے جگر میرے سالے کمنیہ انسان کچھ وقت دے سب ٹھیک ہو جائے گا احان نے کہا تو وہ مسکرایا اور اس سے الگ ہوا ابھی وہ احان کو کچھ کہتا اس کا فون بجا ریحان نے فون دیکھا تو عمران کا تھا

پہلے وہ حیران ہوا کس کا فون ہے احان. نے پوچھا. عمران ریحان نے کہا اور کال پک کی ہیلو سر کیا احان سر آپ کے پاس ہے میں کب سے ان کو کال کر رہا ہوا ان کا نمبر بند جا رہا ہے عمران نے کہا

ہاں میرے پاس ہے کیا بات کرنی ہے تمہیں ریحان نے حیرات سے پوچھا سر پلیز میری بات کرو دے ایمرجیسی ہے پلیز عمران پریشان سا بولا اوکے ریحان نے کہا اور فون احان کی. طرف بڑھیا لو بات کرو ریحان. نے کہا

ہیلو سر پلیز آپ جلدی ہپستال اجاے میم حور کا بہت بری طرح اکیسڈنٹ ہوا ہے احان جو اس کی بات. غور سے سن رہا تھا اس کی بات پر اس کے ہاتھ سے فون زمیں پر گرا

–**–**–
جاری ہے
——
آپکو یہ ناول کیسا لگا؟
کمنٹس میں اپنی رائے سے ضرور آگاہ کریں۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Subscribe For Latest Novels

Signup for Novels and get notified when we publish new Novel for free!




%d bloggers like this: